ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نیوز 18 رائزنگ انڈیا: بابا رام دیو بولے، برہمن نہیں، برہمن واد کے خلاف ہوں

بابا رام دیو نے کہا کہ ایک طرف ہم خوشحالی کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف ذات پات آجاتا ہے ۔ ایسے میں ملک کیسے آگے بڑھے گا ۔

  • Share this:
نیوز 18 رائزنگ انڈیا: بابا رام دیو بولے، برہمن نہیں، برہمن واد کے خلاف ہوں
بابا رام دیو نے کہا کہ ایک طرف ہم خوشحالی کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف ذات پات آجاتا ہے ۔ ایسے میں ملک کیسے آگے بڑھے گا ۔

نیوز 18 رائزنگ انڈیا پروگرام میں پیر کونغمہ نگار پرسون جوشی کے ساتھ سد گرو اور یوگ گرو بابا رام دیو موجود رہے۔ پروگرام میں پرسون جوشی کے سوال کے جواب میں رام دیو نے کہا کہ یوگ عام لوگوں کی زندگی سے اس لئے دور یو گیا کیونکہ خاص لوگوں نے مانا ہے کہ انہیں کا ہر چیز پر حق ہے۔  رام دیو نے کہا کہ میں فرقہ پرستی کے خلاف ہوں ، میں براہمنوں کے خلاف نہیں لیکن براہمن واد کے خلاف ہوں ، کچھ لوگ زبردستی وید – پرانوں کے محافظ بنتے ہیں جبکہ یہ ہم سب کا ہے ۔


ہماری تہذیب میں مذہب اور روحانیت کو ایک سمجھا جاتا ہے ۔ بیرون ممالک میں مذہب اور روحانیت کو الگ الگ مانا جاتا ہے ۔ ہندوستان میں دونوں الگ الگ نہیں ہے ۔ کوئی بائبل یا قرآن کی تنقید نہیں کرسکتا ہے ، لیکن ہندوستان میں ویدوں کی تنقید کرنا فیشن بن گیا ہے ، اس کیلئے ایک پورا گینگ مصروف ہے ۔



بابا رام دیو نے کہا کہ ایک طرف ہم خوشحالی کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف ذات پات آجاتا ہے ۔ ایسے میں ملک کیسے آگے بڑھے گا ۔ ملک کو آگے لے کر کون جائے گا رائزنگ انڈیا کا ایک سوال یہ بھی ہے ۔ ہندوستان کس جانب جارہا ہے ؟ ، اس کے جواب میں رام دیو نے کہا کہ کچھ لوگ یہاں پر تشدد کے نام پر بزدلی کے گیت گاتے ہیں اور بہادری کو گالی دیتے ہیں ، لیکن جب پلوامہ ہو جاتا ہے ، تب چھپ کر بیٹھ جاتے ہیں ۔ اب میں کہتا ہوں کہ یوگ پروک یودھ کرو اور پاکستان جو ناپاک ہو چکا ہے ، اس کو شدھ کرو ۔ میں یہ نہیں کہتا کہ بے قصور لوگوں کو مارو ، لیکن پاکستان ، جس کا وزیر اعظم ناپاک ہے ، ایسا شخص جو فوج اور دہشت گردوں کا کٹھ پتلی ہے ، اس سے کیا امید کرو گے ۔ ہندوستان کو اپنی حفاظت خود کرنی ہوگی ۔ ہم امن کے علمبردار ہیں ، لیکن کوئی ہماری طرف آنکھ اٹھا کر دیکھے گا تو ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے ۔

First published: Feb 25, 2019 06:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading