ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پھانسی کے فیصلے پر بولے نربھیا کے والدین۔ ہماری جدوجہد ختم، لڑائی جاری رہے گی

عدالت کے فیصلے کے بعد نربھیا کی ماں آشا دیوی نے کہا کہ ان کی بیٹی کے قصورواروں کو پھانسی دئیے جانے سے قانون پر خواتین کا اعتماد بحال ہو گا۔

  • Share this:
پھانسی کے فیصلے پر بولے نربھیا کے والدین۔ ہماری جدوجہد ختم، لڑائی جاری رہے گی
پھانسی کے فیصلے پر بولے نربھیا کے والدین۔ ہماری جدوجہد ختم، لڑائی جاری رہے گی

نئی دہلی: دہلی میں سال 2012 میں ہوئے نربھیا اجتماعی آبروریزی معاملےمیں 4 قصور واروں کےلئے پھانسی کی سزا کا اعلان ہوگیا ہے۔ 22 جنوری کونربھیا کوانصاف ملےگا۔ پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں مجرمین کوجلد ازجلد پھانسی دینےکےلئےنربھیا کی ماں کی عرضی پرسماعت پوری ہوگئی ۔ اس کےبعد ڈیتھ وارنٹ پرفیصلہ سنانےسے پہلے ججوں نے چاروں قصورواروں سے ویڈیوکانفرنسنگ کےذریعہ بات کی۔ ججوں نےفیصلہ سناتے ہوئے پھانسی کی سزا کےلئے22 جنوری کی تاریخ مقررکی ہے۔  انہیں 22 جنوری کی صبح 7 بجے پھانسی دی جائے گی۔ عدالت کے فیصلے کے بعد نربھیا کی ماں آشا دیوی نے کہا کہ ان کی بیٹی کے قصورواروں کو پھانسی دئیے جانے سے قانون پر خواتین کا اعتماد بحال ہو گا۔


نربھیا کے مجرمین کو 22 جنوری کو دی جائےگی پھانسی۔


نربھیا کی ماں نےکہا کہ’’ پھانسی کی تاریخ طئے ہو گئی ہے۔ بہت تسلی ملی۔ کیونکہ اس فیصلے کا صرف نربھیا کےماں۔ باپ کو ہی نہیں، بلکہ پورے ملک کوانتظار تھا۔ مجرموں کو جلد ہی پھانسی ہو گی۔ نربھیا کو انصاف ملے گا۔ اس فیصلے سے پورے ملک میں بہت بڑا پیغام جائے گا‘‘۔ انہوں نےکہا کہ سات سال تک ہم نےجدوجہد کی، ہمارے ساتھ لوگوں نے جدوجہد کی۔ اب ہمیں امید ہےکہ ہماری جدوجہد کا مقصد پورا ہو گا۔ حالانکہ دیگر بچیوں کے لئے ہماری لڑائی جاری رہے گی۔


تہاڑجیل نے چاروں قصورواروں کونوٹس جاری کرکے پوچھاتھا کہ وہ رحم کی عرضی داخل کریں گے یا نہیں۔


وہیں، نربھیا کے والد نےکہا ’ میں عدالت کے فیصلے سے خوش ہوں۔ مجرموں کو 22 جنوری کو صبح سات بجے پھانسی دی جائے گی۔ اس فیصلے سے ایسے جرم کو انجام دینے والے مجرمین کے دل میں خوف پیدا ہو گا‘۔
First published: Jan 07, 2020 07:49 PM IST