ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

الکحل سے بنا سینیٹائزر یہاں کی مساجد میں نہیں کیا جائے گا استعمال، قاضی شہر نے بتائی یہ بڑی وجہ

گائیڈ لائن میں کہا گیا ہے کہ ایک وقت کی نماز کے لئے دو یا تین جماعتیں منعقد کی جائیں ، جس میں صرف پانچ فراد ہی شرکت کریں ۔

  • Share this:
الکحل سے بنا سینیٹائزر یہاں کی مساجد میں نہیں کیا جائے گا استعمال، قاضی شہر نے بتائی یہ بڑی وجہ
الکحل سے بنا سینیٹائزر یہاں کی مساجد میں نہیں کیا جائے گا استعمال، قاضی شہر نے بتائی یہ بڑی وجہ

الہ آباد : طویل لاک ڈاؤن کے بعد مساجد میں محدود پیمانے پر نماز با جماعت ادا کرنے کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے ۔  شہر کی تمام چھوٹی بڑی مساجد میں  نماز ادا کی جا رہی ہے ۔ لیکن شہر قاضی مفتی شفیق احمد شریفی نے حکومت کی طرف سے فراہم کردہ الکحل سے بنے سینیٹائزر کا استعمال مساجد میں کرنے سے صاف انکار کردیا ہے  ۔ شہر قاضی نے مساجد انتظامیہ کمیٹیوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنے علاقے کی  مسجدوں میں الکحل سے بنے سینیٹائزر کا استعمال قطعی نہ کریں ۔


قاضی شہر مفتی شفیق احمد شریفی نے  مقامی انتظامیہ کو اپنے فیصلے سے آگاہ کر دیا ہے ۔ انہوں نے واضح کیا ہے کہ عمارتوں کیلئے استعمال ہونے والے سینیٹائزر میں الکحل کی آمیزش ہوتی ہے ، لہٰذا یہ سینیٹائرز مسجدوں کے لئے غیر موزوں ہے  ۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومت کی طرف سے فراہم کردہ سینیٹائرز میں الکحل کی ملاوٹ ہوتی ہے ، جو کہ مسجد کو پاک کرنے کی بجائے اس کو مزید آلودہ کردے گی ۔


مفتی شفیق احمد شریفی نے مساجد کو سینیٹائزڈ کرنے کے لئے الکحل سے پاک متبادل جراثیم کش دواوں کا استعمال کرنے کی ہدایت دی ۔ شہر کی مرکزی جامع مسجد کی طرف سے جاری گائیڈ لائن میں مساجد کے ذمہ داران سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنے اپنے علاقوں کی مساجد میں  نماز پڑھانے کیلئے دو یا تین اماموں کو متعین کریں ۔ گائیڈ لائن میں کہا گہا ہے کہ مساجد میں صرف فرض نماز  ہی ادا کی جائے گی ۔ نماز پڑھانے والے امام چھوٹی سورتوں کا انتخاب کریں گے ۔ سنت اور نوافل کا اہتمام لوگ اپنے گھروں میں جاکر کریں ۔


مفتی شفیق احمد شریفی نے مساجد کو سینیٹائزڈ کرنے کے لئے الکحل سے پاک متبادل جراثیم کش دواوں کا استعمال کرنے کی ہدایت دی ۔
مفتی شفیق احمد شریفی نے مساجد کو سینیٹائزڈ کرنے کے لئے الکحل سے پاک متبادل جراثیم کش دواوں کا استعمال کرنے کی ہدایت دی ۔


گائیڈ  لائن میں یہ بھی  کہا گیا ہے  کہ ایک وقت کی نماز  کے لئے دو یا تین جماعتیں منعقد کی جائیں ، جس میں صرف پانچ فراد ہی شرکت کریں ۔  شہر قاضی نے بچوں اور ضعیفوں سے  فی الحال مسجدوں  میں نہ آنے کی  گذارش کی  ہے ۔ شہر قاضی مفتی شفیق احمد شریفی کا کہنا ہے کہ جمعہ کے نماز میں نمازیوں کی تعداد بڑھانے کیلئے مقامی انتظامیہ سے بات چیت کی جا رہی ہے ۔

شہر قاضی مفتی شفیق احمد شریفی کا کہنا ہے کہ انتظامیہ سے گذارش کی گئی ہے کہ وہ جمعہ کی نماز میں بیس افراد کو جماعت میں شرکت کی جازت دے ۔ مفتی شفیق احمد شریفی کا کہنا ہے کہ آنے والے جمعہ کی نماز میں سماجی فاصلوں اور حکومت کی گائیڈ لائن پر سختی کے ساتھ عمل کیا جائے ۔
First published: Jun 08, 2020 07:16 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading