ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مرکز نے پارلیمانی کمیٹی کی رپورٹ پر کہا۔ این آر سی پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں

مرکزی حکومت نے کہا ہے کہ وہ ابھی ملک بھر میں این آر سی نافذ کرنے پر غور نہیں کر رہی ہے۔ حکومت نے منگل کو راجیہ سبھا میں اس کی اطلاع دی۔

  • Share this:
مرکز نے پارلیمانی کمیٹی کی رپورٹ پر کہا۔ این آر سی پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں
مرکز نے پارلیمانی کمیٹی کی رپورٹ پر کہا۔ این آر سی پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں

نئی دہلی۔ مرکزی حکومت نے کہا ہے کہ وہ ابھی ملک بھر میں این آر سی (NRC) نافذ کرنے پر غور نہیں کر رہی ہے۔ حکومت نے منگل کو راجیہ سبھا میں اس کی اطلاع دی۔ انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق، قومی آبادی رجسٹر (NPR)  اور مردم شماری سے متعلق تشویشات کے سلسلے میں وزارت داخلہ (Home Ministry) کی پارلیمانی کمیٹی کی سفارشات کے جواب میں حکومت نے کہا ہے کہ مردم شماری میں جمع کی گئی سبھی ذاتی سطح کی جانکاری خفیہ ہے۔ مردم شماری میں مختلف انتظامی سطحوں پر صرف جمع شدہ اعداد وشمار جاری کئے جاتے ہیں۔ پہلے کی مردم شماری کی طرح عوام کے درمیان مناسب بیداری پیدا کرنے کے لئے وسیع تشہیری اقدامات کئے جائیں گے تاکہ مردم شماری کو کامیابی سے مکمل کیا جا سکے۔


رپورٹ میں آگے کہا گیا کہ ملک بھر میں کامیاب طور پر منعقدہ پری۔ ٹیسٹ میں این پی آر کے ساتھ مردم شماری کے لئے سوالنامے کی جانچ کی گئی ہے۔ حکومت کی طرف سے کئی بار اور پھر سے مختلف سطحوں پر یہ واضح کیا گیا ہے کہ ابھی تک ہندستانی شہریوں کا قومی رجسٹر بنانے کا کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔ کانگریس رکن پارلیمنٹ آنند شرما کی زیر قیادت کمیٹی نے پچھلے سال فروری میں یہ پایا تھا کہ لوگوں میں آئندہ مردم شماری اور این پی آر کو لے کر کافی زیادہ بےاطمینانی اور خوف کا ماحول ہے۔ اس سلسلے میں کارروائی کی بنیاد پر تیار کی گئی رپورٹ کو منگل کو راجیہ سبھا میں پیش کیا گیا۔


حکومت نے جواب میں کہا کہ کمیٹی کا یہ بھی خیال تھا کہ آئندہ مردم شماری میں آدھار ڈیٹا کا استعمال کیا جانا چاہئے جس سے کہ نقل کو کم کیا جا سکے۔ اس کے لئے حکومت نے جواب دیا ہے کہ این پی آر اور آدھار الگ الگ عمل ہیں جس میں زیادہ تفصیلی ڈیٹا جمع کیا جاتا ہے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Feb 02, 2021 11:09 PM IST