ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کنہیا کمار کے خلاف بغاوت کا کوئی ثبوت نہیں، واپس لئے جا سکتے ہیں الزامات: ذرائع

نئی دہلی۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کی طلبہ یونین ( جے این یو ایس ایو) کے صدر کنہیا کمار کے خلاف بغاوت کے الزامات واپس لئے جا سکتے ہیں۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کنہیا کمار کے خلاف بغاوت کا کوئی ثبوت نہیں، واپس لئے جا سکتے ہیں الزامات: ذرائع
نئی دہلی۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کی طلبہ یونین ( جے این یو ایس ایو) کے صدر کنہیا کمار کے خلاف بغاوت کے الزامات واپس لئے جا سکتے ہیں۔

نئی دہلی۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کی طلبہ یونین ( جے این یو ایس ایو) کے صدر کنہیا کمار کے خلاف بغاوت کے الزامات واپس لئے جا سکتے ہیں۔ وزارت داخلہ کے ذرائع کے مطابق، کنہیا کے خلاف بغاوت کے الزامات کے حق میں اب تک کوئی ثبوت نہیں ہے۔


دریں اثنا، دہلی کے پولیس کمشنر بی ایس بسی نے بدھ کے روز جے این یو معاملہ پر وزیر اعظم کے دفتر کو جانکاری دی۔ بسی نے کہا کہ کنہیا کمار کو کوئی کلین چٹ نہیں دی گئی ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جے این یو ایس یو کے صدر کے خلاف ان کے پاس ثبوت ہیں۔


بسی نے کہا کہ ہمارے پاس کنہیا کے خلاف کافی ثبوت ہیں اور انہی ثبوتوں کی بنیاد پر انہیں گرفتار کیا گیا ہے۔ ہم تو معاملہ کی تفتیش کر رہے ہیں جبکہ کچھ دوسرے لوگ ثبوت ہونے یا نہ ہونے پر تبصرے کر رہے ہیں۔ یہ ایک عجیب بات ہے۔


دلی پولیس کے سربراہ نے مزید کہا کہ ہم اس معاملہ میں ملوث کچھ دوسرے لیڈروں کی تلاش کر رہے ہیں اور ہماری تفتیش منصفانہ ہو رہی ہے۔ طلبہ کی گرفتاریاں درست ہیں اور دہلی پولیس کے خلاف لگائے جا رہے الزامات بے بنیاد ہیں۔

وہیں، کنہیا کمار کا کہنا ہے کہ جے این یو میں افضل گرو کی حمایت میں ہونے والی تقریب میں وہ شامل نہیں تھے ۔ ذرائع نے یہ بھی کہا کہ کنہیا کا دعویٰ ہے کہ نو فروری کو جے این یو میں ہوئی تقریب میں جن لوگوں نے شرکت کی، وہ جے این یو کے طلبہ نہیں تھے۔
First published: Feb 18, 2016 02:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading