உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’دہشت گردی کے کسی بھی عمل کا کوئی جواز نہیں، ہندوستان زیرو ٹالرنس کی راہ پر گامزن‘ S Jaishankar

    جے شنکر نے یو این جی اے کے موقع پر دیگر عالمی رہنماؤں اور نمائندوں کے ساتھ متعدد ملاقاتیں کیں

    جے شنکر نے یو این جی اے کے موقع پر دیگر عالمی رہنماؤں اور نمائندوں کے ساتھ متعدد ملاقاتیں کیں

    77th high-level session of the UN General Assembly: ایس جے شنکر نے ہفتہ کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 77 ویں اعلیٰ سطحی اجلاس میں کہا کہ دہائیوں سے سرحد پار دہشت گردی کا خمیازہ بھگتنے کے بعد ہندوستان مضبوطی سے زیرو ٹالرنس کے نقطہ نظر کی وکالت کرتا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai | Ahmadabad (Ahmedabad) [Ahmedabad] | Jammu | Lucknow
    • Share this:
      77th high-level session of the UN General Assembly: اقوام متحدہ میں وزیر خارجہ ایس جے شنکر (S Jaishankar) نے کہا کہ ہندوستان سرحد پار سے ہونے والی دہشت گردی کے خلاف مکمل طور پر عدم رواداری کے رویہ یعنی زیرو ٹالرنس اپروچ پر قائم ہے جس نے کئی دہائیوں تک اس کا خمیازہ بھگتنا ہے۔ ایس جے شنکر نے ایک دن پہلے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف کے جھوٹے الزامات بیانات کے خلاف سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

      ایس جے شنکر نے ہفتہ کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 77 ویں اعلیٰ سطحی اجلاس میں کہا کہ دہائیوں سے سرحد پار دہشت گردی کا خمیازہ بھگتنے کے بعد ہندوستان مضبوطی سے زیرو ٹالرنس کے نقطہ نظر کی وکالت کرتا ہے۔ ہمارے خیال میں دہشت گردی کی کسی بھی کارروائی کا کوئی جواز نہیں ہے، چاہے وہ محرک کچھ بھی ہو اور کوئی بھی بیان بازی خواہ کتنی ہی مقدس کیوں نہ ہو، خون کے دھبے چھپا نہیں سکتی۔ اقوام متحدہ دہشت گردی کا جواب اپنے مجرموں پر پابندی لگا کر دیتا ہے۔

      عالمی رہنماؤں سے ملاقاتیں:

      جے شنکر نے یو این جی اے کے موقع پر دیگر عالمی رہنماؤں اور ملکی سربراہان کے ساتھ متعدد ملاقاتیں کیں، جن میں روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے دو طرفہ ملاقات بھی شامل ہے۔ اس دوران یوکرین کے تنازعہ پر بھی گفتگو ہوئی۔ جے شنکر نے کہا کہ ہندوستان امن کی طرف ہے۔



      یہ بھی پڑھیں: 

      یہ ہیں سعودی عرب کے 10 وہ راجہ، کسی کی 30 بیویاں تو کوئی 100 بچوں کا باپ

      انھوں نے کہا کہ یہ موقف عالمی پلیٹ فارم پر اس مسئلے کے ساتھ ہندوستان کے سابقہ ​​معاملات سے بھی جھلکتا ہے جس نے بہت سے دوسرے ممالک کی طرح روس کی کھلے عام مذمت نہیں کی۔ روس اور ہندوستان کے درمیان پرانے دوطرفہ تعلقات ہیں، جو اس وقت بھی نظر آتے تھے جب وزیر اعظم نریندر مودی نے صدر ولادیمیر پوتن کے ساتھ آمنے سامنے ملاقات کی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      پاکستان نے لگائے جھوٹے الزام، دہشت گردی اور بات چیت ایک ساتھ ممکن نہیں، UNمیں ہندستان کا کرارا جواب

      ایس جئے شنکر نے کہا کہ جیسا کہ یوکرائن کا تنازعہ بڑھتا جا رہا ہے، ہم سے پوچھا جاتا ہے کہ ہم کس کے ساتھ ہیں؟ ہندوستان امن کی طرف ہے۔ ہم اس طرف ہیں جس سے بات چیت کے ذریعہ حل ہوسکے۔ یہ ہمارے اجتماعی مفاد میں ہے کہ اقوام متحدہ کے اندر اور باہر مل کر کام کیا جائے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: