உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دلت بچوں کی موت پر وی کے سنگھ کا متنازعہ بیان، کوئی کتا کو پتھر مارے تو مرکز ذمہ دار نہیں

    نئی دہلی : ہریانہ میں دلت بچوں کو زندہ جلائے جانے کے واقعہ پر مرکزی وزیر اور غازی آباد سے بی جے پی کے ممبرپارلیمنٹ وی کے سنگھ نے متنازعہ بیان دیا ہے۔

    نئی دہلی : ہریانہ میں دلت بچوں کو زندہ جلائے جانے کے واقعہ پر مرکزی وزیر اور غازی آباد سے بی جے پی کے ممبرپارلیمنٹ وی کے سنگھ نے متنازعہ بیان دیا ہے۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

    نئی دہلی : ہریانہ میں دلت بچوں کو زندہ جلائے جانے کے واقعہ پر مرکزی وزیر اور غازی آباد سے بی جے پی کے ممبرپارلیمنٹ وی کے سنگھ نے متنازعہ بیان دیا ہے۔


    وی کے سنگھ نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت کا دلت بچوں کی موت سے کچھ لینا دینا نہیں ہے۔ وزیر نے کہا کہ اگر کوئی کتا کو پتھر مارے تو حکومت کی ذمہ داری نہیں ہے۔


    وی کے سنگھ سے جب یہ پوچھا گیا کہ کیا یہ حکومت کی ناکامی ہے ؟، انہوں نے کہا حکومت کو اس کے ساتھ مت جوڑے۔ یہ دو خاندانوں کا باہمی جھگڑا تھا، معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہے۔ یہ انتظامیہ کی ناکامی ہے۔


    ڈھائی سال کے ویبھو اور 11 ماہ کی دیویا کو ان کے گھر میں زندہ جلادیا گیا تھا۔ مبینہ طور پر اس واقعہ کو اونچی ذات کے لوگوں نے انجام دیا تھا۔


    وی کے سنگھ کے بیان پر تیکھا وار کرتے ہوئے جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلی عمر عبداللہ نے کہا کہ میرے پاس کہنے کے لئے الفاظ نہیں ہیں۔ عبداللہ نے ٹویٹر کے ذریعے اپنی رائے رکھی ہے۔


    بدھ کی شام بچوں کی آخری رسوم ادا کردی گئی ۔ اس سے پہلے دیہاتیوں نے ان کی لاشوں کو ہائی وے پر رکھ کر جام لگانے کی کوشش کی ۔ ہریانہ حکومت نے معاملے کی سی بی آئی جانچ کی سفارش کردی ہے۔

    First published: