உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعظم مودی کی شبیہ کو خراب کرنے کے خلاف گوگل کے سی ای او اورانڈیا ہیڈ کو عدالت نے بھیجا نوٹس

    الہ آباد۔ الٰہ آباد ڈسٹرکٹ کورٹ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی شبیہ کو خراب کرنے کے معاملے میں گوگل کے سی ای او اور انڈیا ہیڈ کو نوٹس جاری کیا ہے۔

    الہ آباد۔ الٰہ آباد ڈسٹرکٹ کورٹ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی شبیہ کو خراب کرنے کے معاملے میں گوگل کے سی ای او اور انڈیا ہیڈ کو نوٹس جاری کیا ہے۔

    الہ آباد۔ الٰہ آباد ڈسٹرکٹ کورٹ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی شبیہ کو خراب کرنے کے معاملے میں گوگل کے سی ای او اور انڈیا ہیڈ کو نوٹس جاری کیا ہے۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      الہ آباد۔ الٰہ آباد ڈسٹرکٹ کورٹ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی شبیہ کو خراب کرنے کے معاملے میں گوگل کے سی ای او اور انڈیا ہیڈ کو نوٹس جاری کیا ہے۔ عرضی گذار سشیل مشرا کی نظر ثانی کی درخواست کو قبول کرتے ہوئے ضلع جج نے گوگل کو نوٹس جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔

      عدالت اس معاملے کی اگلی سماعت 30 اگست کو كرے گی۔ عدالت نے 30 اگست کو گوگل کے سی ای او لیری پیگ اور انڈیا ہیڈ راجن آنندن کو بھی طلب کیا ہے۔ غور طلب ہے کہ گوگل نے پی ایم مودی کو سرچ میں  دنیا کے ٹاپ ٹین مجرموں کی فہرست میں ڈال رکھا ہے۔

      گوگل پر ٹاپ ٹین کریمنل سرچ کرتے ہی وزیر اعظم مودی کی تصویر دکھائی دے رہی ہے۔ جسے درخواست گزار وکیل سشیل مشرا نے وزیر اعظم کی شبیہ کو خراب کرنے کا الزام لگاتے ہوئے 156 (3) کے تحت سی جی ایم کورٹ میں عرضی داخل کی تھی۔

      سی جی ایم کورٹ کی طرف سے کیس کو ہتک عزت کا کیس بتاتے ہوئے  اسےمجرمانہ نوعیت کا نہیں مانا گیا تھا جس کے خلاف درخواست گزار نے ضلع کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست داخل کی جس پر سماعت کرتے ہوئے ضلع کورٹ نے یہ حکم دیا ہے۔
      First published: