ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ڈاکٹر کفیل خان کو الہ آباد ہائی کورٹ سے بڑی راحت ، معطلی کے آرڈر پر روک ، سرکار سے مانگا جواب

Allahabad High Court : الہ آباد ہائی کورٹ نے بی آر ڈی میڈیکل کالج گورکھپور کے ڈاکٹر کفیل احمد خان کے 31 جولائی 2019 کو پاس کئے گئے معطلی کے آرڈر پر روک لگادیا ہے اور ریاستی حکومت سے 4ہفتے میں عرضی کا جواب دینے کو کہا ہے۔

  • Share this:
ڈاکٹر کفیل خان کو الہ آباد ہائی کورٹ سے بڑی راحت ، معطلی کے آرڈر پر روک ، سرکار سے مانگا جواب
ڈاکٹر کفیل خان کو الہ آباد ہائی کورٹ سے بڑی راحت ، معطلی کے آرڈر پر روک ، سرکار سے مانگا جواب

پریاگ راج : الہ آباد ہائی کورٹ نے بی آر ڈی میڈیکل کالج گورکھپور کے ڈاکٹر کفیل احمد خان کے 31 جولائی 2019 کو پاس کئے گئے معطلی کے آرڈر پر روک لگادیا ہے اور ریاستی حکومت سے 4ہفتے میں عرضی کا جواب دینے کو کہا ہے۔ معاملے کی اگلی سماعت 11نومبر کو ہوگی ۔ کورٹ نے عرضی گذار کے خلاف محکمہ جاتی جانچ کی کاروائی ایک مہینے میں پورا کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے رپورٹ طلب کیا ہے۔یہ حکم جسٹس سرل شریواستو نے ڈاکٹر کفیل خان کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے دیا۔


قابل ذکر ہے کہ عرضی میں 2018 میں ڈائرکٹوریٹ دفتر لکھنؤ سے وابستہ تھا تو اسی وقت بہرائچ میں انسیفیلائٹس بیماری کی وجہ سے ایک ہفتے میں 70بچوں کی اموات ہوگئی تھیں۔ ایسے میں عرضی گذار علاج کرنے وہاں گیا تھا۔ اور عرضی گذار کو بغیر اجازت جبراَ بچوں کا علاج کرنے و سرکار مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزام میں معطل کردیا گیا تھا۔جسے چیلنج کیا گیا ہے۔


عرضی گذار کا کہنا ہے کہ معطلی کے دو سال بعد بھی ابھی جانچ کا عمل پورا نہیں ہوا ہے۔ ایسے میں ان کی معطلی واپس کی جائے۔ جب ایک معاملے میں معطلی ہے تو دوسرے معاملے میں معطل کرنے کا کوئی مطلب نہیں ہے۔


وہیں سرکاری وکیل نے کہا کہ جانچ رپورٹ 27 اگست کو پیش کردی گئی ہے۔ درخواست گزار کو اعتراض داخل کرنے کا موقع دیا گیا ہے ۔ حکومت کو جانچ کے دوران ملازم کو معطل کرنے کا حق حاصل ہے ۔ عدالت نے اس مسئلے کو قابل بحث سمجھا اور حکومت سے جواب طلب کیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 14, 2021 11:57 PM IST