ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستانی فوج کے لئے ون لبریکینٹ زید شیخ کا کارنامہ، پروڈکٹ کوفوج کی منظوری

زید شیخ نے سخت محنت اور انتہائی کوششوں کے بعد ون لبریکینٹ ون نیشن اور آتم نربھر بھارت والے تصور کے تحت اس پروڈکٹ کو بھارتی فوج کے لئے بنایا ہے۔

  • Share this:
ہندوستانی فوج کے لئے ون لبریکینٹ زید شیخ کا کارنامہ، پروڈکٹ کوفوج کی منظوری
زید شیخ نے سخت محنت اور انتہائی کوششوں کے بعد ون لبریکینٹ ون نیشن اور آتم نربھر بھارت والے تصور کے تحت اس پروڈکٹ کو بھارتی فوج کے لئے بنایا ہے۔

زید شیخ نے سخت محنت اور انتہائی کوششوں کے بعد ون لبریکینٹ ون نیشن اور آتم نربھر بھارت والے تصور کے تحت اس پروڈکٹ کو بھارتی فوج کے لئے بنایا ہے۔ ان کا دعوی ہے کہ یہ ہندوستان کا پہلا لبریکینٹ ہے ۔ فوج کی گاڑیوں کے لئے یہ مفید ثابت ہوگا۔ گزشتہ پانچ برسوں سے زید نے لبریکنٹ کو لیکر محنت کی اور اب اسے ہندوستانی فوج نے منظوری دےدی ہے۔ زید کے اس لبریکینٹ کا استعمال اب ہندوستانی فوج کے ہر اس گاڑی میں کیا جائے گا جس میں انجن ہوتا ہے اور اس میں بھی خاص بات یہ ہے کہ ہر گاڑی میں ایک ہی لبریکینٹ یعنی اسی کا استعمال کیا جائیگا۔ یعنی ون آئل فار ون وہیکل.جبکہ پہلے ایسا بالکل نہیں تھا۔ ہر گاڑی کیلئے الگ الگ طرح کے لبریکینٹ استعمال کئے جاتے تھے۔


زید شیخ کا کہنا ہے کہ ہندوستانی فوج نے اس کو ایک برس تک جانچا اورپرکھا ..اور پھر حال ہی میں انہوں نے فوج میں استعمال کی منظوری دے دی۔ زید کا کہنا ہے کہ لبریکینٹ کا استعمال موسم کے حساب سے ہوتا ہے۔ راجستھان.میں جن گاڑیوں میں استمعال کیا جاتا ہے۔ وہاں کے درجہ حرارت کے حساب سے ہوتا ہے لیکن فوج کی لیہ لداخ یا کشمیر میں استعمال کیا جاتا تو انھیں لبریکینٹ کو بدلنا ہوتا ہے اور اس کے لئے ٢٠ منٹ کا وقت لگتا ہے لیکن اس کی سب سے بڑی خاصیت یہ ہے کہ ہر موسم میں اور ہر جگہ استعمال کیا جا سکتا ہے۔


اسی خاصیت کی وجہ سے فوج نے اسے ہاتھوں ہاتھ لیا ..زید شیخ نے اپنی ابتدائی تعلیم اردو میڈیم سے حاصل کی اور انجمن اسلام کے زیر اہتمام چلنے والا ادارہ صابو صدیق ٹیکنیکل کالج سے انجینیرنگ کی تعلیم حاصل کی۔ انجینیرنگ کی تعلیم کے دوران زید کی منشاء تھی کی وہ ملک کے لئے کچھ ایسا کرے جس سے انکی ایک الگ پہچان بن سکے اور وہ اپنے اس میں کامیاب ہوئے۔


رپورٹ:وسیم انصاری
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 11, 2021 04:59 PM IST