ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سوشل میڈیا پر آن لائن بازار کے ذریعہ قربانی کے جانوروں کی خرید فروخت ، بازار نہ لگنے سے تاجر اور خریدار دونوں پریشان

عید الاضحٰی کے موقع پر قربانی کے جانوروں کی تجارت کرنے والے تاجر پریشان ہیں ۔ بازار میں فروخت کرنے کیلئے ایک سال پہلے سے تیاری کر رہے تاجر اب آن لائن پلیٹ فارم پر سوشل میڈیا کے ذریعہ اپنے جانور فروخت کر رہے ہیں ۔

  • Share this:
سوشل میڈیا پر آن لائن بازار کے ذریعہ قربانی کے جانوروں کی خرید فروخت ، بازار نہ لگنے سے تاجر اور خریدار دونوں پریشان
سوشل میڈیا پر آن لائن بازار کے ذریعہ قربانی کے جانوروں کی خرید فروخت ، بازار نہ لگنے سے تاجر اور خریدار دونوں پریشان

عید الاضحی سے پہلے قربانی کے جانوروں کی خرید و فروخت کیلئے شہر اور دیہی علاقوں میں خصوصی بازار اور پیٹھ لگتے ہیں ۔ لیکن اس سال کورونا وبا کے قہر نے تہوار اور بازار کو بھی بری طرح متاثر کیا ہے ۔ عید الاضحٰی کے موقع پر قربانی کے جانوروں کی تجارت کرنے والے تاجر پریشان ہیں ۔ بازار میں فروخت کرنے کیلئے ایک سال پہلے سے تیاری کر رہے تاجر اب آن لائن پلیٹ فارم پر سوشل میڈیا کے ذریعہ اپنے جانور فروخت کر رہے ہیں ۔ میرٹھ میں شاہ پیر گیٹ کے رہنے والے واحد گزشتہ 30 برسوں سے قربانی کے بکروں کی تجارت سے جڑے ہوئے ہیں ۔


واحد راجستھان کی چنندہ نسل کے بکروں کو پال کر تیار کرتے ہیں ، جو عید الاضحٰی کے موقع پر کافی اچھی قیمت میں فروخت ہو جاتے ہیں ۔ لیکن اس سال کورونا وبا کے قہر نے سب کچھ بدل کر رکھ دیا ہے ۔ واحد اُونچے قد و قامت کے سو کیلو سے بھی زیادہ وزن کے بکرے فروخت کرتے ہیں جو اچھی دیکھ بھال اور خوراک سے دس سے بارہ مہینوں میں تیار ہوتے ہیں اور بازار میں ان کی اچھی قیمت مل جاتی ہے ، لیکن اس سال بازار نہ لگنے سے اب واحد ان بکروں کو آن لائن فروخت کر رہے ہیں ۔


 


آن لائن وہاٹس ایپ اور فیس بک جیسے سوشل میڈیا میڈیا پلیٹ فارم کے ذریعہ قربانی کے جانوروں کو فروخت کرنے کی یہ ترکیب کام تو کر رہی ہے ، لیکن واجب دام حاصل نہیں ہو رہے ہیں ۔ گزشتہ سال بھی قربانی کے جانوروں کی آن لائن تجارت جانور تاجروں کیلئے تجارت کا ایک نیا ذریعہ ثابت ہوئی تھی ، لیکن اس سال حالات مختلف ہیں اور آن لائن بازار کا دائرہ بھی محدود ہے ، جس کی وجہ سے نے نہ صرف کاروبار متاثر ہے ، بلکہ خریدار بھی پریشان ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 18, 2020 04:38 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading