உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوٹ بندی پر حزب اختلاف میں دراڑ، جے ڈی یو-لیفٹ کا میٹنگ سے کنارہ کشی کا اشارہ، ایس پی-بی ایس پی پر بھی سسپنس

    نئی دہلی۔  نوٹ بندی کے معاملے پر کانگریس کی پہل پر اپوزیشن لیڈروں کی کل مجوزہ میٹنگ میں مارکسی کمیونسٹ پارٹی حصہ نہیں لے گی اور جنتا دل یونائٹیڈ سمیت کئی پارٹیوں کے بھی حصہ لینے کا امکان کم ہے۔

    نئی دہلی۔ نوٹ بندی کے معاملے پر کانگریس کی پہل پر اپوزیشن لیڈروں کی کل مجوزہ میٹنگ میں مارکسی کمیونسٹ پارٹی حصہ نہیں لے گی اور جنتا دل یونائٹیڈ سمیت کئی پارٹیوں کے بھی حصہ لینے کا امکان کم ہے۔

    نئی دہلی۔ نوٹ بندی کے معاملے پر کانگریس کی پہل پر اپوزیشن لیڈروں کی کل مجوزہ میٹنگ میں مارکسی کمیونسٹ پارٹی حصہ نہیں لے گی اور جنتا دل یونائٹیڈ سمیت کئی پارٹیوں کے بھی حصہ لینے کا امکان کم ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  نوٹ بندی کے معاملے پر کانگریس کی پہل پر اپوزیشن لیڈروں کی کل مجوزہ میٹنگ میں مارکسی کمیونسٹ پارٹی حصہ نہیں لے گی اور جنتا دل یونائٹیڈ سمیت کئی پارٹیوں کے بھی حصہ لینے کا امکان کم ہے۔ پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کے آخری دنوں میں نوٹ بندی کے معاملے میں اپوزیشن اتحاد میں دراڑ آجانے کے بعد کانگریس نے اسے پاٹنے کی پہل کے تحت غیر این ڈی اے جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر لانے کی کوشش کے تحت یہ میٹنگ طلب کی تھی لیکن سی پی ایم نے یہ کہہ کر کہ و ہ اس میٹنگ میں حصہ نہیں لے گی اپوزیشن اتحاد کی مہم میں رخنہ ڈال دیا ہے۔ جنتا دل یو کے ترجمان کے سی تیاگی کا کہنا ہے کہ اس میٹنگ کا کوئی کم از کم مشترکہ ایجنڈا طے نہیں کیا گیا ہے ۔ اس لئے ان کی پارٹی نے اس میٹنگ میں حصہ لینے کے بارے میں ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔حالانکہ مسٹر تیاگی نے دو دن قبل اس بات کی تصدیق کی تھی کہ پارٹی کی طرف سے سینئر لیڈر شرد یادو میٹنگ میں حصہ لیں گے۔


      اس دوران سی پی ایم کے جنرل سکریٹری سیتا رام یچوری نے آج کولکاتہ میں نامہ نگاروں کو بتایا کہ وہ کل کانگریس کی قیادت میں ہونے والی مشترکہ پریس کانفرنس میں شامل نہیں ہوں گے۔ مسٹر یچوری کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ کے اندر نوٹ بندی کے معاملے پر لڑنے کے لئے اپوزیشن جماعتیں ایک ساتھ تھیں لیکن پارلیمنٹ سے باہر اس لڑائی کو لڑنے کے لئے ایک مجوزہ میٹنگ کے لئے مناسب منصوبہ بندی نہیں کی گئی ۔ حتی کہ آر جے ڈی اور این سی پی کو ابھی اس بات کو لے کر اعتراض ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی اس میٹنگ میں حصہ لیں گی تو تریپورا اور شمال مشرق کے کئی دیگر وزیر اعلی اس میں کیوں نہیں حصہ لیں گے۔ دریں اثنا محترمہ بنرجی اس میٹنگ میں شرکت کے لئے کل کولکاتہ سے دہلی آ رہی ہیں۔


      First published: