ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایس پی اور بی جے پی کے مابین ساز باز، بھاگوت کو اجازت اور مجھ پر پابندی، کیوں: اویسی

لکھنؤ۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے سماجوادی پارٹی (ایس پی) اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے مابین ساز باز کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ اس کے سبب ہی راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت کے پروگراموں کی اجازت اور ان پر پابندی لگائی گئی۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 28, 2016 09:00 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایس پی اور بی جے پی کے مابین ساز باز، بھاگوت کو اجازت اور مجھ پر پابندی، کیوں: اویسی
لکھنؤ۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے سماجوادی پارٹی (ایس پی) اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے مابین ساز باز کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ اس کے سبب ہی راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت کے پروگراموں کی اجازت اور ان پر پابندی لگائی گئی۔

لکھنؤ۔  آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے سماجوادی پارٹی (ایس پی) اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے مابین ساز باز کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ اس کے سبب ہی راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت کے پروگراموں کی اجازت اور ان پر پابندی لگائی گئی۔ ایک روزہ دورہ پر آج یہاں آئے مسٹر اویسی نے پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی اور سماج وادی پارٹی آپس میں ملی ہوئی ہیں لیکن اب ان کا پردہ فاش ہوجائے گا۔ انہوں نے کہاکہ دونوں کے اتحاد کی وجہ سے ہی ان کے پروگراموں پر پابندی لگائی جا رہی ہے جبکہ موہن بھاگوت کو پروگرام کی کھلی چھوٹ ہے، انہوں نے اسے جمہوریت کیلئے خطرناک قرار دیا۔


انہوں نے کہاکہ سماج وادی پارٹی کی حکومت ان سے خوف زدہ ہے، اس لئے ان کے پروگراموں کے سلسلے میں پسینے چھوٹتے رہتے ہیں۔ مسٹر اویسی کو اس ماہ کے آغاز میں تین روزہ دورہ پر یہاں آنا تھا۔ انہیں لکھنؤ کے بعد فیض آباد، امبیڈکر نگر اور اعظم گڑھ جانا تھا لیکن لکھنؤ میں ریلی کرنے کی اجازت نہ دیئے جانے پر انہوں نے اپنا دورہ منسوخ کردیا تھا۔  مظفرنگر فساد کیلئے سماج وادی پارٹی اور بی جے پی کو یکساں طور پر ذمہ دار قرار دیتے ہوئے مسٹر اویسی نے کہاکہ فسادات کیلئے حقیقی طور پر ذمہ دار لوگوں کو بخش دیا گیا۔ ان کے بھارت ماتا کی جے نہ بولنے پر اٹھے تنازعہ پر ان کا کہنا تھا کہ انہیں حب الوطنی کیلئے کسی کے ثبوت کی ضرورت نہیں ہے۔


سماج وادی پارٹی پر خاص طور پر برہم نظر آئے مسٹر اویسی نے کہا کہ مسلمانوں کو ایک سازش کے تحت تعلیم سے دور رکھنے کی کوشش کی گئی۔ اس سے پہلے اے آئی ایم آئی ایم کے صدر نے ہمسایہ ضلع بارہ بنکی کے دیوا شریف میں واقع حاجی وارث علی شاہ کے مزار پر چادر چڑھائی۔


owaisi,


آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے صدر رابع حسنی ندوی سے بھی انہوں نے ملاقات کی۔ معروف اسلامی تعلیمی ادارہ دارالعلوم ندوہ میں دونوں کی تقریباً ایک گھنٹے تک چلنے والی ملاقات میں مسلمانوں سے متعلق کئی موضوعات پر تبادلہ خیال ہوا۔ ذرائع کا دعوی ہے کہ دونوں کے مابین ریاستی اسمبلی کے آئندہ سال ہونے والے الیکشن کے بارے میں بھی بات چیت ہوئی۔ مسٹر اویسی نے شیعہ مذہبی پیشوا کلب جواد سے بھی ملاقات کی۔ مسٹر جواد اکثر سماج وادی حکومت کے خلاف بیان دیتے رہتے ہیں۔


First published: Mar 28, 2016 08:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading