உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kashmir: کشمیر میں ٹارگٹ کلنگ کاابھرتا مسئلہ، پاکستانی دہشت گردلےرہےہیں نام نہادتنظیموں کاسہارا

    جموں وکشمیر: شہریوں پر فائرنگ کرکے فرار ہوئے دہشت گرد

    جموں وکشمیر: شہریوں پر فائرنگ کرکے فرار ہوئے دہشت گرد

    ذرائع نے بتایا کہ وادی میں مقیم حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے کارندے خاص طور پر سرینگر اور جنوبی کشمیر میں آئی ایس آئی کی ہدایات کے تحت رہائی پانے والے دہشت گردوں اور اوور گراؤنڈ ورکرز (OGWs) کے ساتھ مل کر نئی پراکسی تنظیمیں بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

    • Share this:
      ذرائع نے CNN-News18 کو بتایا کہ پاکستان میں قائم دہشت گرد ہینڈلرز وادی کشمیر میں پنڈتوں، غیر مقامی مزدوروں، سیاسی کارکنوں اور سیکورٹی اہلکاروں وغیرہ کی ٹارگٹ کلنگ کے لیے مقامی یا نام نہاد تنظیموں کا استعمال کر رہے ہیں۔

      ذرائع نے مزید کہا کہ جہادی تنظیموں کی تازہ ترین حکمت عملی وادی میں عام شہریوں کی ٹارگٹ کلنگ کے لیے ’ہائبرڈ دہشت گردوں‘ کے استعمال کا سہارا لے کر آنے والی امرناتھ یاترا کے دوران گڑبڑ پیدا کرنے کا ایک بڑا ذریعہ ثابت ہو سکتی ہے۔

      ذرائع نے بتایا کہ آئی ایس آئی نے دہشت گرد کمانڈروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ جموں و کشمیر میں سی آر پی ایف یونٹوں/ناکا پارٹیوں پر باقاعدہ حملے کریں، خاص طور پر سری نگر اور آس پاس کے علاقوں میں نئے بھرتی ہونے والے کیڈروں کے ذریعے انہیں چھوٹے ہتھیار جیسے پستول، گرنیڈ وغیرہ فراہم کر کے کیے جاتے ہیں۔

      سری نگر اور جنوبی کشمیر جموں و کشمیر میں دہشت گردی سے متعلق واقعات کا مرکز بنے ہوئے ہیں۔ وادی میں دراندازی کرنے والے جہادیوں کے لیے شمالی کشمیر زیادہ تر ترجیحی مرکزی مقام بنا ہوا ہے۔ مسلسل دہشت گردانہ کارروائیوں سے سری نگر کا امن ناپید نظر آتا ہے۔

      ذرائع نے بتایا کہ وادی میں مقیم حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے کارندے خاص طور پر سرینگر اور جنوبی کشمیر میں آئی ایس آئی کی ہدایات کے تحت رہائی پانے والے دہشت گردوں اور اوور گراؤنڈ ورکرز (OGWs) کے ساتھ مل کر نئی پراکسی تنظیمیں بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

      یسین ملک کو عمر قید کی سزا کے اعلان کے بعد سری نگر شہر اور اس کے اطراف میں ہندوستان مخالف نعرے، پتھراؤ کے واقعات اور سکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپیں ہوئیں۔ نیز آئی ایس آئی بیرون ملک مختلف تنظیموں کے ساتھ مل کر بین الاقوامی برادری کی توجہ مبذول کرانے کے لیے ملک کی حمایت میں احتجاجی مظاہرے کر رہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Al Qaeda Threat:دہشت گرد تنظیم القاعدہ نے دی ہندوستان میں خودکش حملے کی دھمکی

      جنوری سے اب تک جموں و کشمیر میں 28 غیر ملکیوں سمیت 93 دہشت گردوں کو بے اثر کیا گیا ہے۔ حکام نے بتایا کہ ایک اہم پیش رفت میں سیکورٹی فورسز نے 6 جون کو سوپور، بارہمولہ میں ایک مشترکہ کارروائی میں ایک پاک لشکر طیبہ کے دہشت گرد کو ہلاک کر دیا جس کی شناخت حنظلہ کے نام سے ہوئی، جو کہ لاہور کا رہائشی تھا۔

      مزید پڑھیں:BJP Leader Nupur Sharma News:مشتعل خلیجی ممالک سعودی عرب اور UAE کو کیسے منائے گا ہندوستان؟کیا ہے ماہرین کی رائے


      ذرائع کے مطابق لائن آف کنٹرول اور پاکستان کے زیر قبضہ جموں و کشمیر (پی او جے کے) میں بین الاقوامی سرحد کے پار دہشت گردوں کے لانچنگ پیڈ مختلف مقامات پر مختلف حراستی سطحوں پر برقرار ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں مقیم تنظیموں خاص طور پر آئی ایس آئی کی طرف سے مسلسل کوششیں کی جا رہی ہیں، تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ آنے والے دنوں میں کٹر اور پرعزم عسکریت پسندوں کی طاقت کو کافی زیادہ رکھنے کے لیے زیادہ سے زیادہ کیڈرز کو جموں و کشمیر میں دراندازی کی جائے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: