ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوروپی یونین کا پاکستان کو دوٹوک جواب ، بلوچستان میں مظالم نہیں رکے تو لگ سکتی ہے پابندی

بلوچستان کے مسئلے پر پاکستان کو ایک اور جھٹکا لگا ہے ۔ یوروپی یونین نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ اگر پاکستان کو یوروپی ممالک کے ساتھ معاہدے کرنے ہیں ، تو اسے بلوچستان کو لے کر اپنی پالیسی بدلنی ہوگی ۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Sep 24, 2016 05:43 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
یوروپی یونین کا پاکستان کو دوٹوک جواب ، بلوچستان میں مظالم نہیں رکے تو لگ سکتی ہے پابندی
بلوچستان کے مسئلے پر پاکستان کو ایک اور جھٹکا لگا ہے ۔ یوروپی یونین نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ اگر پاکستان کو یوروپی ممالک کے ساتھ معاہدے کرنے ہیں ، تو اسے بلوچستان کو لے کر اپنی پالیسی بدلنی ہوگی ۔

نئی دہلی : بلوچستان کے مسئلے پر پاکستان کو ایک اور جھٹکا لگا ہے ۔ یوروپی یونین نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ اگر پاکستان کو یوروپی ممالک کے ساتھ معاہدے کرنے ہیں ، تو اسے بلوچستان کو لے کر اپنی پالیسی بدلنی ہوگی ۔ یورپی یونین نے کہا کہ بلوچستان میں جو کچھ ہو رہا ہے اسے پاکستان کا اندرونی معاملہ نہیں سمجھا جا سکتا ہے ۔


یورپی یونین کا یہ بیان اس وقت آیا جب بلوچ لیڈر برہمداگ بگتی اور طارق فتح نے یورپین پارلیمنٹ کے وائس پریسیڈنٹ سے سوئٹزرلینڈ میں ملاقات کی ۔ وائس پریسیڈنٹ کے مطابق یہ پاکستان کا اندرونی معاملہ نہیں ہے ۔ ہمارے پاکستان کے ساتھ ہر طرح کے معاہدے ہیں ۔ اگر پاکستان نے بلوچستان کے لئے اپنی نہیں پالیسی بدلی ، تو ہم اپنا نظریہ بدل لیں گے ۔ کچھ کرنے کا یہی صحیح وقت ہے ۔


واضح رہے کہ بلوچستان طویل عرصے سے پاکستان سے اپنی آزادی کا مطالبہ کر رہا ہے ۔ اس کے لئے بلوچ لیڈر اور وہاں کے عوام وقتا فوقتا اپنی آوازیں بلند کرتے ہیں ۔ ان آوازوں کو دبانے کے لئے پاکستانی فوج وہاں طاقت کا استعمال کرتی ہے اور لوگوں پر ظلم ڈھاتی ہے ۔ وہیں بلوچستان میں چین نے کئی منصوبوں میں سرمایہ کاری کی ہے ۔ ان منصوبوں میں سے ایک چین پاکستان اقتصادی کوریڈور بھی ہے ۔

First published: Sep 24, 2016 09:38 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading