ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہنگامے کی نذرہوا پارلیمنٹ کا بجٹ سیشن ، لوک سبھا میں 23 اورراجیہ سبھا میں 28 فیصد ہی ہوا کام کاج

بجٹ سیشن میں مختلف مسائل پر کانگریس کےساتھ ساتھ علاقائی پارٹیوں کےہنگامےکی وجہ سےلوک سبھااورراجیہ سبھاکاکام کاج مایوس کن رہا۔

  • UNI
  • Last Updated: Apr 06, 2018 11:59 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہنگامے کی نذرہوا پارلیمنٹ کا بجٹ سیشن ، لوک سبھا میں 23 اورراجیہ سبھا میں 28 فیصد ہی ہوا کام کاج
فائل فوٹو

نئی دہلی: بجٹ سیشن میں مختلف مسائل پر کانگریس کےساتھ ساتھ علاقائی پارٹیوں کےہنگامےکی وجہ سےلوک سبھااورراجیہ سبھاکاکام کاج مایوس کن رہا۔ اس سیشن میں لوک سبھااورراجیہ سبھا کےکام کاج کا اوسط23اور28ہی رہا۔ وزیربرائےپارلیمانی اموراننت کماراوروزیرمملکت برائےاموروجےگوئل نے پارلیمنٹ کےدونوں ایوانوں کی کارروائی غیرمعینہ مدت تک ملتوی کئےجانےکےبعدآج صحافیوں کوبتایاکہ29جنوری سےشروع ہوئےاس بجٹ سیشن کےدونوں مرحلوں میں لوک سبھاکی29اورراجیہ سبھاکی30میٹنگیں ہوئیں۔

پہلےمرحلےمیں لوک سبھاکی 7اورراجیہ سبھاکی8میٹنگیں ہوئی تھیں۔انہوں نے کہاکہ پہلےمرحلےمیں لوک سبھاکےکام کاج کااوسط134اورراجیہ سبھاکااوسط96ہی رہا ۔لیکن دوسرےمرحلےمیں کانگریس سمیت کئی علاقائی پارٹیوں کےہنگامےکی وجہ سےلوک سبھاکااوسط صرف4اورراجیہ سبھاکا8ہی رہا۔اس طرح مجموعی طورپربجٹ سیشن میں لوک سبھاکااوسط23اورراجیہ سبھاکااوسط 28ہی رہا۔

انہوں نے کہاکہ سیشن کےدوران لوک سبھامیں مالیاتی بل2018سمیت پانچ بل پیش کئے گئےاورپانچ ہی بل منظوربھی کئےگئے۔راجیہ سبھا میں صرف ایک ہی بل منظورہوا۔

First published: Apr 06, 2018 11:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading