ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ : کورونا متاثرین کی موت کے بڑھتے معاملات سے خوفزدہ شہر ، پولیس بھی ہوئی سخت

لوگوں کا کہنا ہے کہ میرٹھ میں جس طرح سے کورونا انفیکشن سے متاثرین کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہو رہا ہے ، اس سے لگتا ہے کہ آنے والے دنوں میں شہر کو کوئی راحت اور رعایت نہیں ملنے والی ہے ۔

  • Share this:
میرٹھ : کورونا متاثرین کی موت کے بڑھتے معاملات سے خوفزدہ شہر ، پولیس بھی ہوئی سخت
میرٹھ : کورونا متاثرین کی موت کے بڑھتے معاملات سے خوفزدہ شہر ، پولیس بھی ہوئی سخت

میرٹھ میں کورونا انفیکشن سے متاثرین کی تعداد میں جہاں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے ، وہیں  موت کا اعداد و شمار بھی بڑھتا جا رہا ہے ۔ میرٹھ میں اب تک کورونا سے 11 افراد کی جان کا چکی ہے ۔ دیر رات جہاں دہلی کے صفدر جنگ اسپتال میں میرٹھ کے بی جے پی مہا نگر صدر کے پی ایس او ویبھانشو کی موت ہو گئی ، وہیں آج دن میں شہر کے کیلاشی اسپتال میں زیر علاج ایک اور شخص کی موت ہو گئی ، جس کی بعد میں رپورٹ پازیٹیو آئی ہے ۔ وہیں متاثرین کی تعداد 199 ہو گئی ہے ۔


شہر کے لوگوں کا کہنا ہے کہ میرٹھ میں جس طرح سے کورونا انفیکشن سے متاثرین کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہو رہا ہے ، اس سے لگتا ہے کہ آنے والے دنوں میں شہر کو کوئی راحت اور رعایت نہیں ملنے والی ہے ۔ کورونا کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے پولیس نے بھی سختی برتنی شروع کر دی ہے ۔ خاص طور پر صبح کے وقت میں باہر نکل کر خریداری کرنے والوں پر پولیس کی سختی بڑھ گئی ہے ۔  گزشتہ روز اور آج بھی پولیس نے کئی سو گاڑیوں کا چالان کیا ، سینکڑوں گاڑیاں ضبط کی گئیں اور درجنوں کیس درج کئے گئے ۔


لوگوں پر دباؤ ڈال کر گھروں میں رہنے کے لیے مجبور کرنے کے مقصد سے پولیس نے یہ حکمت عملی اختیار کی ہے ، لیکن ابھی بھی شہر کے بیشتر پرانے علاقوں میں لاک ڈاؤن کو لے کر لوگ سنجیدہ نظر نہیں آ رہے ہیں ۔ ایسے علاقوں میں اب صبح اور شام کے وقت پولیس پیکٹ اور موبائل وین کے ذریعہ نگرانی کی جا رہی ہے اور سختی برتی جا رہی ہے ۔ بازاروں میں دکانوں کو ترتیب سے کھلوانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ تاکہ غیر ضروری بھیڑ جمع نہ ہونے دی جائے ۔ لیکن باوجود ان سب احتیاطی اقدامات کے کورونا کے بڑھتے معاملات سے ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت بھی پریشان اور حیران ہے ۔

First published: May 09, 2020 11:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading