اپنا ضلع منتخب کریں۔

    بیماری سے ہوئی سن رسیدہ کی موت لیکن کورونا کی دہشت سے کسی نے ارتھی کو نہیں دیا کندھا 

    بیماری سے ہوئی سن رسیدہ کی موت لیکن کورونا کی دہشت سے کسی نے ارتھی کو نہیں دیا کندھا

    بیماری سے ہوئی سن رسیدہ کی موت لیکن کورونا کی دہشت سے کسی نے ارتھی کو نہیں دیا کندھا

    راجیشور کے فرزند اور داماد جب ان کی میت کو لے کر گاوں پہنچے ، تو گاوں والوں نے بھی ان افراد سے دوری اختیار کر لی ۔ کورونا کے سبب ہوئی موت سمجھ کر کسی گاوں والے نے میت کو کندھا تک نہیں دیا ۔

    • Share this:
    میرٹھ کی سردھنا تحصیل کے گاوں بهموری کے رہنے والے ستاون برس کے راجیشور رانا کو دو ہفتہ پہلے بخار ہوا تھا ۔ راجيشور نے پہلے گاوں میں ہی دوا لے کر بخار کا علاج کیا ، لیکن کوئی فائدہ نہ ہونے کے بعد گھر والوں نے انہیں علاقہ کے ہمالین اسپتال میں داخل کرایا ، جہاں راجیشور کو آئی سی یو میں داخل کیا گیا ۔ راجیشوار کے فرزند ابھیشیک کے مطابق اسپتال کے اسٹاف نے ان کے والد کو کورونا کی علامات ظاہر ہونا بتایا تھا ، لیکن کورونا کا ٹیسٹ نہ کرانے کی صلاح دی ۔

    ابھیشیک کے مطابق اسپتال کے اسٹاف کا کہنا تھا کہ اگر راجیشور کا کووڈ ٹیسٹ کرایا گیا اور اس میں کورونا کی تصدیق ہو جاتی ہے ، تو راجیشور کو سرکاری اسپتال میں داخل کرنا پڑے گا ، جہاں علاج کے بہتر انتظامات نہیں ہیں ۔ اسپتال اسٹاف کے غلط  مشورہ سے گمراہ ہوکر راجیشور کے گھر والوں نے ان کا کووڈ ٹیسٹ نہیں کرایا اور کورونا کے خوف سے راجیشور سے دوری بنا لی ۔

    اِدھر راجیشور کی حالت بگڑتی جا رہی تھی ، حالات زیادہ نازک ہونے پر گھر والوں نے راجیشور کو شہر کے دوسرے بڑے اسپتال میں داخل کرایا ، جہاں ٹیسٹ کرانے پر راجیشور میں ڈینگو کی تصدیق ہوئی ، لیکن شروعات سے ہی ڈینگو کا علاج نہ ملنے کی وجہ سے راجیشور کی حالت میں کوئی سدھار نہ ہونے اور حالت بگڑ جانے کی وجہ سے راجیشور کے اہل خانہ نے مریض کو رشی کیش اسپتال میں منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ۔ لیکن اب تک بہت دیر ہو چکی تھی اور اسپتال لے جانے کے دوران راستے میں ہی راجیشور کی موت ہو گئی ۔

    راجیشور کے فرزند اور داماد جب ان کی میت کو لے کر گاوں پہنچے ، تو گاوں والوں نے بھی ان افراد سے دوری اختیار کر لی ۔ کورونا کے سبب ہوئی موت سمجھ کر کسی گاوں والے نے میت کو کندھا تک نہیں دیا ۔ راجیشور کے فرزند کے مطابق وہ لوگوں سے چیخ چیخ کر کہتے رہے کہ راجیشور کی موت کورونا سے نہیں ، بلکہ ڈینگو سے ہوئی ہے ۔ لیکن کسی نے ان پر یقین نہیں کیا اور آخر کار بیٹے اور داماد کو اکیلے ہی راجیشور کی ارتھی کو کندھا دے کر آخری رسومات ادا کرنی پڑی ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: