உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    NMC: پاکستان سے ستائی ہوئی اقلیتوں کا ہندوستان میں مستقبل، نیشنل میڈیکل کمیشن نے کیا بڑا اعلان

    انڈر گریجویٹ میڈیکل ایجوکیشن بورڈ کے مطابق درخواست دہندہ کے پاس ایک درست طبی اہلیت کا ہونا ضروری ہے

    انڈر گریجویٹ میڈیکل ایجوکیشن بورڈ کے مطابق درخواست دہندہ کے پاس ایک درست طبی اہلیت کا ہونا ضروری ہے

    نوٹس میں کہا گیا ہے کہ شارٹ لسٹ شدہ درخواست دہندگان کو امتحان میں شرکت کرنے کی اجازت ہوگی، جو کمیشن کے ذریعہ مجاز کسی ایجنسی کے ذریعہ منعقد کیا جائے گا۔

    • Share this:
      نیشنل میڈیکل کمیشن (National Medical Commission) نے پاکستان سے ستائی ہوئی اقلیتوں کے لیے دروازے کھول دیے ہیں، جو ملک سے بھاگ کر 31 دسمبر 2014 کو یا اس سے پہلے ہندوستان میں داخل ہوئے تھے، تاکہ وہ ہندوستان میں رہ کر شعبہ طب میں اپنی قسمت آزمائی کرے۔ اس نے ایسے لوگوں سے درخواستیں طلب کی ہیں جنہوں نے جدید طب یا ایلوپیتھی کی مشق کرنے کے لیے مستقل رجسٹریشن کے لیے ہندوستانی شہریت حاصل کی ہے۔

      جمعہ کو نیشنل میڈیکل کمیشن کے انڈر گریجویٹ میڈیکل ایجوکیشن بورڈ (UMEB) کی طرف سے جاری کردہ ایک عوامی نوٹس کے مطابق شارٹ لسٹ کردہ درخواست دہندگان کو کمیشن یا اس کے ذریعہ مجاز ایجنسی کے ذریعہ منعقد ہونے والے امتحان میں شرکت کرنے کی اجازت ہوگی۔ این ایم سی نے جون میں ماہرین کا ایک گروپ تشکیل دیا تھا تاکہ مجوزہ ٹیسٹ کے لیے رہنما خطوط وضع کیے جائیں تاکہ پاکستان سے ستائی جانے والی اقلیتوں میں سے میڈیکل گریجویٹس طب کی مشق کے لیے مستقل رجسٹریشن حاصل کر سکیں۔

      انڈر گریجویٹ میڈیکل ایجوکیشن بورڈ کے مطابق درخواست دہندہ کے پاس ایک درست طبی اہلیت کا ہونا ضروری ہے اور اس نے ہندوستان منتقل ہونے سے پہلے پاکستان میں طب کی مشق کی ہو گی۔ درخواستیں جمع کرانے کی آخری تاریخ 5 ستمبر ہے۔ درخواست دہندگان کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ نیشنل میڈیکل کمیشن ویب سائٹ پر فراہم کردہ لنک کے ذریعے آن لائن درخواست بھرنے کے لیے دی گئی ہدایات پر سختی سے عمل کریں۔

      پبلک نوٹس میں کہا گیا ہے کہ کمیشن آف لائن درخواستوں پر غور نہیں کرے گا۔ کمیشن تمام درخواستوں کی جانچ پڑتال متعلقہ ایجنسیوں اور محکموں کے ساتھ مشاورت سے کرے گا۔
      یہ بھی پڑھیں:

      MP News: ہندوستان، پاکستان اور بنگلہ دیش کے بیچ فیڈریشن بناکر مسائل کو حل کیا جا سکتا ہے : پنڈت راج ناتھ شرما

      اس میں کہا گیا ہے کہ شارٹ لسٹ شدہ درخواست دہندگان کو امتحان میں شرکت کرنے کی اجازت ہوگی، جو کمیشن کے ذریعہ مجاز کسی ایجنسی کے ذریعہ منعقد کیا جائے گا۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ درخواست دہندگان جو امتحان میں کامیاب ہوتے ہیں وہ ہندوستان میں جدید ادویات یا ایلوپیتھی پریکٹس کرنے کے لیے مستقل رجسٹریشن دینے کے اہل ہوں گے۔
      یہ بھی پڑھیں:

      LPG Cylinder:مہنگے ہوئے بڑے سلینڈر تو چھوٹے سلینڈروں کے بڑھی فروخت،آگرہ میں فروخت 30 فیصد تک بڑھی

      ماہرین کے گروپ کی تشکیل کے بارے میں این ایم سی نوٹیفکیشن کو 20 جون کو جاری کیا گیا۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ وزارت صحت نے اپنی جامع کوشش کے ذریعے فیصلہ کیا کہ مجوزہ انتظامات کے فیصلے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے مناسب رہنما خطوط یا ضابطے بنائے جا سکتے ہیں۔ قومی میڈیکل کمیشن کی براہ راست نگرانی میں پاکستان سے ہجرت کرنے والی مظلوم اقلیتوں کے لیے جدید طب کی تعلیم اور پرکٹس کی سہولیات فراہم کی جائے گی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: