ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تبلیغی جماعت: ٹوئٹر ہیش ٹیگ کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی

نئی عرضی میں راجدھانی کے نظام الدین واقع تبلیغی جماعت کے پروگرام کو فرقہ وارانہ رنگ دینے والے ٹوئٹر ’’ہیش ٹیگ‘‘ کے خلاف عرضی دائر کی گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Apr 14, 2020 06:28 PM IST
  • Share this:
تبلیغی جماعت: ٹوئٹر ہیش ٹیگ کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی
کاشی ۔ متھرا تنازعہ: ہندو تنظیم کے بعد جمعیتہ علماء ہند نے بھی سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا۔

نئی دہلی۔ تبلیغی جماعت سے متعلق خبروں کی تشہیر اور پھیلاؤ کے سلسلے میں میڈیا پر پابندی لگانے سے سپریم کورٹ کے انکار کے ایک دن بعد اسی طرح کی ایک اور عرضی عدالت عظمی میں دائر کی گئی ہے۔ نئی عرضی میں راجدھانی کے نظام الدین واقع تبلیغی جماعت کے پروگرام کو فرقہ وارانہ رنگ دینے والے ٹوئٹر ’’ہیش ٹیگ‘‘ کے خلاف عرضی دائر کی گئی ہے۔ مختلف طرح کے ہیش ٹیگ میں جماعتیوں کو پورے ملک میں جان بوجھ کر کورونا وائرس پھیلانے کا قصوروار بتایا گیا ہے۔


پیشے سے وکیل خواجہ اعجاز الدین نے اپنی عرضی میں کہا کہ یہ ٹرینڈ ’’اسلامک کورونا وائرس جہاد، ہیش ٹیگ کورونا جہاد، ہیش ٹیگ نظام الدین نئی ڈیٹس، ہیش ٹیگ تبلیغی جماعت وائرس وغیرہ کے طور پر تیار کئے گئے ہیں۔ عرضی گزار کا کہنا ہے کہ یہ ہیش ٹیگ جماعتیوں کے خلاف اور عالمی صحت تنظیم (ڈبلیو ایچ او) کی رہنما ہدایات اور مذہب کے خلاف ہیں۔ عرضی گزار نے کہا کہ ’’کورونا وائرس کے لئے خاص فرقے کو قصوروار بنانا ڈبلیو ایچ او کی جانب سے 18 مارچ کو جاری کی گئی رہنما ہدایات کے مخالف ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ مذہب کو وبا سے نہیں جوڑا جائے گا‘‘۔


تبلیغی جماعت کے افراد: فائل فوٹو
تبلیغی جماعت کے افراد: فائل فوٹو


اس کے علاوہ یہ ہندوستان کے علاقائی دائرہ اختیار میں موجود قوانین کے برخلاف ہے، جس میں مذہب کی توہین کرنے، کسی فرقے کے جذبات کو مجروح کرنے اور ملک کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو بگاڑنے کے لئے تادیبی قانون نافذ کرنے کی اپیل کی گئی ہے۔
First published: Apr 14, 2020 06:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading