உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پڑھیں: من کی بات میں وزیر اعظم مودی نے کیا کیا کہا

    نئی دہلی :وزیر اعظم مودی نے آج 14 ویں بار ملک کے لوگوں سے من کی بات کی۔ وزیر اعظم نے من کی بات کے آغاز کرتے ہوئے کہا کہ پیارے ہم وطنو دیوالی کے مبارک تہوار کے درمیان آپ نے چھٹیاں بہت اچھے طریقے سے منائی ہوں گی، اب کرسمس کی تیاریاں بھی شروع ہو گئی ہوں گی۔ زندگی میں جشن زخم بھرنے کے کام آتے ہیں تو کبھی نئی توانائی بخشتے ہیں۔

    نئی دہلی :وزیر اعظم مودی نے آج 14 ویں بار ملک کے لوگوں سے من کی بات کی۔ وزیر اعظم نے من کی بات کے آغاز کرتے ہوئے کہا کہ پیارے ہم وطنو دیوالی کے مبارک تہوار کے درمیان آپ نے چھٹیاں بہت اچھے طریقے سے منائی ہوں گی، اب کرسمس کی تیاریاں بھی شروع ہو گئی ہوں گی۔ زندگی میں جشن زخم بھرنے کے کام آتے ہیں تو کبھی نئی توانائی بخشتے ہیں۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی :وزیر اعظم مودی نے آج 14 ویں بار ملک کے لوگوں سے من کی بات کی۔ وزیر اعظم نے من کی بات کے آغاز کرتے ہوئے کہا کہ پیارے ہم وطنو دیوالی کے مبارک تہوار کے درمیان آپ نے چھٹیاں بہت اچھے طریقے سے منائی ہوں گی، اب کرسمس کی تیاریاں بھی شروع ہو گئی ہوں گی۔ زندگی میں جشن زخم بھرنے کے کام آتے ہیں تو کبھی نئی توانائی بخشتے ہیں۔


      آج کل دنیا کے ہر کونے سے جو نہ کبھی سنا ہو اور نہ کبھی سوچا ہو، ایسی ایسی قدرتی آفات کی خبریں آتی رہتی ہیں۔ موسمیاتی تبدیلی کے اثرات کتنی تیزی سے بڑھ رہے ہیں ، یہ اب ہم لوگ تجربہ کر رہے ہیں۔ گزشتہ دنوں بےموسمي بارش کی وجہ سے بالخصوص تمل ناڈو میں کافی جانی نقصان ہوا اور دیگر ریاستوں پر بھی اس کا اثر پڑا ہے، بہت سے لوگوں کی جانیں گئیں۔ میں اس بحران کی گھڑی میں ان تمام خاندانوں کے تئیں اپنی تعزیت ظاہر کرتا ہوں۔


      ریاستی، مرکزی حکومتیں پوری طاقت سے امدادی کام کر رہی ہیں ۔ مرکزی حکومت کی ایک ٹیم تمل ناڈو گئی ہوئی ہے اور مجھے یقین ہے تمل ناڈو اس بحران کے باوجود وہ پھر سے تیز رفتاری سے آگے بڑھنے لگ جائے گا۔


      جالندھر کے لكھوندر سنگھ کے فون کا تذکرہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ لكھوندر جی مجھے خوشی ہوئی کہ آپ نامیاتی کاشتکاری کرنے والے کسان ہیں، اتنا ہی نہیں آپ کسانوں کے مسائل سے بھی بخوبی واقف ہیں۔ کسانوں کو تربیت دینی پڑے گی۔ انہیں بتانا پڑے گا کہ فصل کی باقیات کو جلانے سے ہو سکتا ہے وقت اور محنت بچتی هو ، گيلےكن یہ صحیح نہیں ہے۔


      فصل کی باقیات بھی بہت قیمتی ہوتے ہیں۔ وہ اپنے آپ میں وہ ایک نامیاتی کھاد ہوتےہیں ، ہم اس کو برباد کرتے ہیں۔ فصل کی باقیات جلانے سے زمین کے بالائی پرت کی نمی ختم ہوجاتی ہے، جو ہماری کاشتکاری زمین کو موت کی طرف دھکیل دیتی ہے۔ باقیات کو پھر سے ایک مرتبہ زمین میں دبا دیا جائے تو وہ کھاد بن جاتا ہے ۔

      First published: