ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر اعظم مودی کو سیاہ پرچم دکھانے سےقبل ہی دو طلبہ کو گرفتار کیا گیا

لکھنؤ۔ بنارس ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو)کے کانووکیشن میں آج وزیر اعظم نریندر مودی کو سیاہ پرچم اور حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے پوسٹر دکھانے کے لیے احاطے میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے دو طالب علموں کو سیکورٹی فورسز نے حراست میں لے لیا ۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 22, 2016 01:41 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزیر اعظم مودی کو سیاہ پرچم دکھانے سےقبل ہی دو طلبہ کو گرفتار کیا گیا
لکھنؤ۔ بنارس ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو)کے کانووکیشن میں آج وزیر اعظم نریندر مودی کو سیاہ پرچم اور حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے پوسٹر دکھانے کے لیے احاطے میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے دو طالب علموں کو سیکورٹی فورسز نے حراست میں لے لیا ۔

لکھنؤ۔ بنارس ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو)کے کانووکیشن میں آج وزیر اعظم نریندر مودی کو سیاہ پرچم اور حیدرآباد یونیورسٹی کے طالب علم روہت ویمولا کے پوسٹر دکھانے کے لیے احاطے میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے دو طالب علموں کو سیکورٹی فورسز نے حراست

میں لے لیا ۔ پولیس نے بتایا کہ مسٹر مودی کی یونیورسٹی احاطے میں پہنچنے سے پہلے کاشی ودیاپیٹھ کے دو طالب علموں کو پولیس نے اس وقت حراست میں لیا جب وہ آج صبح سنگھ دروازے سے یونیورسٹی کیمپس میں داخل کرنے کی کوشش کر رہے تھے۔


انہوں بتایا کہ حراست میں لئے گئے ایک طالب علم کی شناخت وجے پرتاپ بھارتی کے طور پر کی گئی ہے۔ پولیس دونوں طالب علموں سے پوچھ گچھ کر رہی ہے۔ وزیر اعظم کے دہلی روانہ ہونے کے بعد دونوں کو رہا کر دیا جائے گا۔ اس درمیان سیر گووردھن واقع روی داس کی جائے پیدائش مندر میں ایک سنت کے دھرنے پر بیٹھنے سے انتظامیہ کے لئے کچھ وقت کے لئے کشمکش کی صورتحال پیدا ہو گئی۔ دھرنے پر بیٹھا سنت مسٹر مودی کے مندر میں داخل نہیں ہونے سے متعلق نعرے بازی کر رہا تھا تاہم بعد میں انتظامیہ نے اسے سمجھانے کی کوشش کی اور معاملے کو حل کر لیا۔

First published: Feb 22, 2016 01:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading