உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بے ایمانوں کو بچانے کے لئے کچھ لیڈر انہیں 'سیاسی تحفظ' فراہم کر رہے ہیں: نریندر مودی

    بی ایچ یو میں مهامنا مدن موہن مالویہ کینسر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد اپنے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا کہ نوٹ بندی کی مخالفت کر رہے کچھ لوگ بے ایمانوں کے ساتھ کھڑے ہوئے۔

    بی ایچ یو میں مهامنا مدن موہن مالویہ کینسر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد اپنے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا کہ نوٹ بندی کی مخالفت کر رہے کچھ لوگ بے ایمانوں کے ساتھ کھڑے ہوئے۔

    بی ایچ یو میں مهامنا مدن موہن مالویہ کینسر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد اپنے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا کہ نوٹ بندی کی مخالفت کر رہے کچھ لوگ بے ایمانوں کے ساتھ کھڑے ہوئے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      وارانسی۔  وزیر اعظم نریندر مودی نے نوٹوں کی منسوخی کی مخالفت کرنے والی سیاسی جماعتوں اور لیڈروں پر 'پاکستان کی طرح' حکمت عملی اختیار کرنے اور بے ایمانوں کو بچانے کے لئے 'سیاسی تحفظ' فراہم کرنے کا الزام لگایا۔ مسٹر مودی نے آج اپنے پارلیمانی حلقہ وارانسی میں واقع کاشی ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو) کے سوتنترتا بھون آڈیٹوریم میں منعقد کلچرل فیسٹیول سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان دراندازوں کو بھیجنے کے لئے سرحد پر فائرنگ شروع کر دیتا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا، "ہماری فوج ادھر مصروف ہو جاتی ہے اور دہشت گرد لپک کر گھس جاتے ہیں۔ پاکستانی فوج دراندازوں کو 'کور' دیتی ہے۔ ٹھیک اسی طرح بے ایمانوں کو بچانے کے لئے اپنے ملک میں 'سیاسی تحفظ' دیا جا رہا ہے۔ " انہوں نے طنزیہ انداز میں کہا کہ جیب کترا جیسے ہی پاکٹ مار تا ہے، اس کے ساتھی پولیس کو بھٹکانے کے لئے دوسری طرف چور چور کا شور مچاتے ہیں۔ پولیس کی توجہ ہٹتے ہی جیب کترا نکل جاتا ہے۔ بے ایمانوں کو بچانے کے لئے نہ جانے کیسی کیسی ترکیبیں اختیار کی جا رہی ہیں۔


      مسٹر مودی نے کہا کہ سابق وزیر اعظم ڈاکٹرمنموہن سنگھ 1970 سے ملک کی معیشت کی کور ٹیم میں تھے۔ ڈاکٹر سنگھ کا کہنا ہے کہ جس ملک میں 50 فیصد لوگ غریب ہوں وہاں کیش لیس نظام کے لئے نئی ٹیکنالوجی کس طرح لائی جا سکتی ہے۔ ڈاکٹر منموہن سنگھ کو بتانا چاہئے کہ 10 برس وہ وزیر اعظم تھے، ملک کے وزیر خزانہ تھے پھر بھی آدھی آبادی غریب کس طرح رہ گئی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اسی طرح سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے کہہ دیا 50 فیصد گاؤں میں بجلی ہی نہیں ہے۔ انہوں نے طنز کیا، "کیا بجلی کا تار ہم نے کاٹ دیا۔ کیا ستون ہم نے اکھاڑ دیا۔ بھائی میرے، ہمیں بتائیے کہ آپ نے یہ رپورٹ کارڈ کس کا پیش کیا ہے۔ ملک میں 60 برس سے زیادہ حکومت آپ کی پارٹی کی تھی، تو یہ سب کس طرح رہ گیا۔ "


      مسٹر مودی نے کہا کہ ملک میں بڑی صفائی مہم چل رہی ہے۔ گندگی کا ڈھیر ہو گیا ہے۔گندگی کے ڈھیر کے پاس سے گزرنے سے بدبو آتی ہے۔ ایک حد تک بو محسوس ہوتی ہے لیکن جب اس کی صفائی شروع ہوتی ہے تو وہ اتنی پھیلتی ہے کہ وہاں سے گزرنا مشکل ہو جاتا ہے۔ آج کل طرح طرح کی بو محسوس ہو رہی ہے۔ میں نے بو کی صفائی کا بیڑا اٹھایا ہے۔ 'بھولے بابا' کی زمین کا آشیرواد ہمارے ساتھ ہے۔ عوام کا اعتماد مل رہا ہے۔ گندگی کی صفائی تو ہوکر رہے گی۔

      First published: