உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعظم مودی نے جلیاں والا باغ میموریل کے نوتعمیر شدہ کمپلکس کو قوم کے نام کیا وقف، کہی یہ بڑی بات

    وزیر اعظم مودی نے جلیاں والا باغ میموریل کے نوتعمیر شدہ کمپلکس کو قوم کے نام کیا وقف، کہی یہ بڑی بات ۔ تصویر : یو این آئی ۔

    وزیر اعظم مودی نے جلیاں والا باغ میموریل کے نوتعمیر شدہ کمپلکس کو قوم کے نام کیا وقف، کہی یہ بڑی بات ۔ تصویر : یو این آئی ۔

    وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ ہر سطح پر خودانحصاری اور خوداعتماد ی کی بہت ضرورت ہے اور آج ضرورت ہے کہ ہم قوم کی بنیاد کو مضبوط کریں اور اس پر فخر کریں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : وزیراعظم نریندر مودی نے سنیچر کو کہا کہ ہر سطح پر خودانحصاری اور خوداعتماد ی کی بہت ضرورت ہے اور آج ضرورت ہے کہ ہم قوم کی بنیاد کو مضبوط کریں اور اس پر فخر کریں۔ وزیر اعظم مودی نے آج شام جلیاں والا باغ میموریل کے نوتعمیر شدہ کمپلکس کو قوم کے نام وقف کیا ۔ انہوں نے اس موقع پر کہا کہ امرت مہوتسوپروگرام کے دوران گاوں گاوں میں مجاہدین کو یاد کیا جارہا ہے، ان کا احترام کیا جارہا ہے۔ قومی ہیروز سے وابستہ مقامات کے تحفظ کے ساتھ ساتھ وہاں نئی جہتیں بھی شامل کی جارہی ہیں۔ جلیاں والا باغ کی طرح دوسرے اہم مقامات کا اپ گریڈیشن کیا جارہا ہے۔ آزادی کی تحریک میں ہمارے قبائلیوں کا اہم کردار ہے لیکن انہیں وہ جگہ نہیں ملی جس کے وہ حق دار تھے۔ حالیہ دنوں میں شہید ہوئے فوجیوں کو مناسب احترام ملا ہے۔

      اس موقع پر ثقافت کے مرکزی وزیر جی کشن ریڈی اور کئی ریاستوں کے وزرائے اعلی بھی موجود تھے۔ 13اپریل 1919کو جلیاں والا باغ میں ہوئے قتل عام کو دکھانے کے لئے لائٹ ساونڈ کا پروگرام بھی نشر کیا گیا ۔ وزیراعظم کا یہ پروگرام ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ مکمل ہوا۔ وزیراعظم نے کہاکہ ملک کی چوطرفہ ترقی کے لئے ہم سب کو متحد ہوکر کام کرنا ہوگا۔ مجھے اعتماد ہے کہ جلیاں والا باغ کی یہ زمین مسلسل توانائی دیتی رہے گی۔

      وزیراعظم مودی نے کہا کہ ملک کو محفوظ رکھنے کے لئے عظیم قربانی دینے والے فوجیوں کے لئے بنا نیشنل وار میموریل نوجوانوں کو ترغیب دیتا رہے گا ۔ جلیاں والا باغ نے بے شمار انقلابیوں اور قربانی دینے والوں کو ہندوستان کے لئے مر مٹنے کا حوصلہ دیا ، جس کی وجہ سے آج ہم آزادی کا امرت مہوتسومنا رہے ہیں ۔ کئی بار جلیاں والا باغ آنے کی خوش نصیبی ملی ۔ جلیاں والا باغ کی یہ نئی شکل نئی نسل کو ہمیشہ آزادی کے سفر کی یاد دلائے گی کہ ہمارے بزرگوں نے کیا کیا کیا ہے۔ قوم کو سب سے اوپر رکھنے کی ترغیب، نئی توانائی اسی جگہ سے ملے گی ۔ سابقہ واقعات ہمیں سکھاتے ہیں اور آگے بڑھنے کا راستہ بھی دکھاتے ہیں۔

      انہوں نے کہا کہ تقسیم کی تکلیف آج بھی ہندوستان کے ساتھ خاص طورپر پنجاب کے لوگوں کو یاد رہتی ہے ، ماضی کو نظرانداز کرنا صحیح نہیں ہے۔ اس لئے ہر سال 14اگست کو ’وبھاجن وبھیشیکا اسمرتی دیوس‘(تقسیم کی ہولناکیوں کو یاد کرنے کا دن) منانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جو یاد دلائے گا کہ آزادی کے لئے ہم نے کتنی بڑی قیمت ادا کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کا دور ہو یا افغانستان کا بحران ہم نے سب کا مقابلہ کیا ہے۔ آپریشن دیوی شکتی کے تحت سینکڑوں ہندوستانیوں کوواپس لایا جارہا ہے ، چیلنجز بہت ہیں ۔ ہم گرو گرنتھ صاحب کے سوروپ کو سر پر رکھ کر ہندوستان لائے ہیں۔

      انہوں نے پنجاب کی بہادروں کی زمین اور جلیاں والا باغ کی مٹی کو سلام کیا اور کہا کہ جلیاں والا باغ کے آس پاس طویل عرصہ سے بے کار پڑی عمارتوں کو چار میوزیم گیلریوں میں تبدیل کیا گیا ۔ باغ میں موجود شہیدی کنوئیں کی بھی مرمت کی گئی ہے۔ انہیں پنجاب کے مقامی تعمیراتی انداز کو مدنظر رکھتے ہوئے پھر سے تعمیر کیا گیا ہے۔ تاریخ کی جھلکیاں تھر ی ڈی تکنالوجی کے ساتھ دکھائی جائیں گی۔

      پنجاب کے وزیراعلی کیپٹن امریندر سنگھ نے بھی پروگرام سے خطاب کیا۔ کیپٹن سنگھ نے کہاکہ بزرگوں کی قربانی کو یاد رکھنے کی ضرورت ہے۔ پنجاب کے گورنر بھی تقریب میں موجود رہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: