உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نیشنل لاجسٹک پالیسی کا پی ایم مودی نے کیا آغاز، کیا ہے یہ اور کیوں پڑی اس کی ضرورت؟

    وزیر اعظم نریندر مودی  (فائل فوٹو)

    وزیر اعظم نریندر مودی (فائل فوٹو)

    National Logistics Policy: پی ایم مودی نے کہا کہ امرت کال میں ملک نے ترقی یافتہ ہندوستان بنانے کی سمت ایک اہم قدم اٹھایا ہے۔ میک ان انڈیا اور ہندوستان کے خود انحصاری کی طرف بڑا قدام ہے۔ ہندوستان برآمدات کے بڑے اہداف مقرر کر رہا ہے اور انہیں پورا بھی کر رہا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Hyderabad | Mumbai | Jammu
    • Share this:
      وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) نے نیشنل لاجسٹک پالیسی (NLP) کا آغاز کیا جس کا مقصد ملک میں لاجسٹکس کی قیمتوں کو کم کرنا ہے۔ انہوں نے لانچ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ ترقی یافتہ ہندوستان بنانے کی طرف ایک اہم قدم ہے۔ انہوں نے اس پالیسی کو بہت سے مسائل کا حل قرار دیا، اور کہا کہ اس سے ہمارے اقتصادی نظام میں بہتری آئے گی۔ جس کی نئے ہندوستان کو ضرورت ہے۔

      پی ایم مودی نے کہا کہ امرت کال میں ملک نے ترقی یافتہ ہندوستان بنانے کی سمت ایک اہم قدم اٹھایا ہے۔ میک ان انڈیا اور ہندوستان کے خود انحصاری کی طرف بڑا قدام ہے۔ ہندوستان برآمدات کے بڑے اہداف مقرر کر رہا ہے اور انہیں پورا بھی کر رہا ہے۔ ہندوستان ایک مینوفیکچرنگ ہب کے طور پر ابھر رہا ہے۔ ایسی صورتحال میں نیشنل لاجسٹک پالیسی کے تحت مزید ترقی ممکن ہے۔

      انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان ایک مینوفیکچرنگ ہب کے طور پر ابھر رہا ہے۔ دنیا نے ہندوستان کو مینوفیکچرنگ میں ایک رہنما کے طور پر قبول کیا ہے۔

      نیشنل لاجسٹک پالیسی کے تحت پانچ اہم نکات پیش ہیں:

      1. پالیسی ملکی اور برآمدی منڈیوں میں ہندوستانی سامان کی مسابقت کو بہتر بنانے کے لیے ملک میں لاجسٹک لاگت کو کم کرتی ہے۔ پی ایم او نے ایک بیان میں کہا کہ لاجسٹک لاگت میں کمی معیشت کے مختلف شعبوں میں کارکردگی میں کمی کو بہتر بناتی ہے، جس سے ویلیو ایڈیشن اور انٹرپرائز کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے۔

      2. وزیر اعظم کے دفتر (PMO) کے مطابق ایک قومی پالیسی کی ضرورت محسوس کی گئی کیونکہ ہندوستان میں لاجسٹک لاگت دیگر ترقی یافتہ معیشتوں کے مقابلے میں زیادہ ہے۔

      3. پالیسی ہندوستانی سامان کی مسابقت کو بہتر بنانے، اقتصادی ترقی کو بڑھانے اور روزگار کے مواقع بڑھانے کی کوشش کرتی ہے۔

      4. پی ایم او کے مطابق پی ایم گتی شکتی ملٹی ماڈل کنیکٹیویٹی کا قومی ماسٹر پلان کے آغاز کے ساتھ مزید فروغ اور تکمیل حاصل کرے گا۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      5. خبر رساں ایجنسی اے این آئی کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہندوستان جی ڈی پی کا تقریباً 13 سے 14 فیصد لاجسٹک اخراجات پر خرچ کرتا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: