ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیراعظم مودی نے بالآخر دادری سانحہ اور غلام علی کی مخالفت کئے جانے پر چپی توڑی،اظہارافسوس کیا

دادری۔ دادری سانحہ پر مچے ہنگامہ کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے پہلی بار اپنی خاموشی توڑی ہے۔

  • News18
  • Last Updated: Oct 14, 2015 10:41 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزیراعظم مودی نے بالآخر دادری سانحہ اور غلام علی کی مخالفت کئے جانے پر چپی توڑی،اظہارافسوس کیا
دادری۔ دادری سانحہ پر مچے ہنگامہ کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے پہلی بار اپنی خاموشی توڑی ہے۔

دادری۔ دادری سانحہ پر مچے ہنگامہ کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے پہلی بار اپنی خاموشی توڑی ہے۔ انہوں نے صاف کہا کہ دادری کا واقعہ بہت افسوسناک اور المناک ہے۔ بی جے پی اس طرح کے واقعہ کی حمایت نہیں کرتی ہے۔


ایک اخبار کو دیے گئے انٹرویو میں مودی نے کہا کہ دادری والے واقعہ کی امید نہیں تھی۔ لیکن اس میں مرکز کا کیا کردار ہو سکتا ہے۔ اپوزیشن ہمارے اوپر الزام لگا رہے ہیں۔ وہ لوگ فرقہ واریت کی سیاست کرتے ہیں اور الزام ہمارے اوپر لگائے جا رہے ہیں۔


دادری میں ہوئے واقعہ پرمرکز کیا کر سکتا ہے۔ ظاہر ہے مودی کا اشارہ صوبے کی اکھلیش حکومت کی جانب تھا۔ آپ کو بتا دیں کہ گائے کا گوشت کھانے کی افواہ میں دادری کے بساہڑا گاؤں میں اخلاق نامی ایک شخص کو قتل کر دیا گیا تھا۔


اس واقعہ پر خوب ہنگامہ مچا تھا۔ لیکن اس پورے معاملے میں مودی خاموش تھے۔ جس کے بعد کچھ ادیبوں نے دباؤ بنانے کے لئے اپنے انعامات واپس لوٹا دئے۔ وہیں غلام علی کے پروگرام منسوخ ہونے کے معاملے پر بھی مودی نے افسوس ظاہر کیا۔


بہار میں ہوئی ریلی میں بھی جتایا تھا افسوس


مودی نے بہار میں ہوئی ریلی میں فرقہ واریت کی سیاست کرنے والوں سے دور رہنے کے لئے کہا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ مودی بھی اگر ایسے بیان دیتا ہے تو بھی آپ لوگ دھیان نہ دیں۔

First published: Oct 14, 2015 10:41 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading