உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کا خود ٹویٹ کرنا بالا کوٹ کا سب سے بڑا ثبوت: نریندرمودی

    وزیراعظم نریندر مودی: فائل فوٹو

    وزیراعظم نریندر مودی: فائل فوٹو

    وزیراعظم نےکہا کہ اگرہم نےفوج پرکچھ کیا ہوتا یا شہریوں پر کچھ کیا ہوتا تو پاکستان دنیا بھر میں چلا چلا کر ہندوستان کو بدنام کر دیتا، تو ہماری حکمت عملی یہ تھی کہ ہم غیرفوجی کاروئی کریں گے اورعوام کا کوئی نقصان نہ ہو اس کا دھیان رکھیں گے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی:  وزیر اعظم نریندر مودی نے جموں وكشمير کے پلوامہ میں سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے قافلے پر فدائین دہشت گرد حملے کے بعد بالاكوٹ میں فضائی کاروائی کا ثبوت مانگنے والوں کو جواب دیتے ہوئےکہا کہ سب سے بڑا ثبوت پاکستان نے خود ٹویٹ کرکے دنیا کو دیا تھا۔

      نریندرمودی نے اے بی وی پی نیوز چینل کو دیئے انٹرویو میں پاکستان کے بالاكوٹ میں ہندوستانی فضائیہ کی کارروائی کا ثبوت مانگے جانے سے متعلق پوچھے گئےسوال پر کہا ’’سب سے بڑا ثبوت پاکستان نے خود ٹویٹ کرکے دنیا کودیا ۔ ہم نے توکوئی دعوی نہیں کیا تھا۔ ہم تو اپنا کام کرکے خاموش بیٹھے تھے۔ اس کاروائی میں کتنے مرے ، کتنے نہیں مرے ، یہ جس کو جھگڑا کرنا ہے کرتا رہے‘‘۔

      وزیراعظم مودی نےکہا ’’اگر ہم نے فوج پرکچھ کیا ہوتا یا شہریوں پر کچھ کیا ہوتا تو پاکستان دنیا بھر میں چلا چلا کر ہندوستان کو بدنام کر دیتا، تو ہماری حکمت عملی یہ تھی کہ ہم غیر فوجی کاروئی کریں گے اور عوام کا کوئی نقصان نہ ہو اس کا دھیان رکھیں گے۔ یہ پہلا ہمارا بنیادی اصول تھا کہ ہم دہشت گردوں کو ہی نشانہ بنائیں گے۔ فضائیہ نے اپنا کام کامیابی سے کیا۔ پلوامہ حملےکے وقت ان کے شوٹنگ کےتنازعہ پر نریندر مودی نےکہا ’’پلوامہ کے واقعہ کا مجھے پہلے سے پتہ تھا كيا؟ میرا تو روٹین پروگرام تھا اتراکھنڈ میں، کچھ چیزیں ایسی ہوتی ہیں جس کا ہینڈل کرنے کا طریقہ ہوتا ہے۔
      First published: