உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایکسکلوزیوانٹرویونیوز18 کےساتھ: نہروکی پالیسیاں کشمیرکی ترقی میں رکاوٹ، پٹیل حل کرسکتے تھے مسائل: وزیراعظم مودی

    نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹران چیف اورسی ای او راہل جوشی کے ساتھ ایکسکلوزیوبات چیت میں وزیراعظم مودی نے کشمیرکے مسائل کوصرف ڈھائی اضلاع کا مسئلہ بتایا۔

    نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹران چیف اورسی ای او راہل جوشی کے ساتھ ایکسکلوزیوبات چیت میں وزیراعظم مودی نے کشمیرکے مسائل کوصرف ڈھائی اضلاع کا مسئلہ بتایا۔

    نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹران چیف اورسی ای او راہل جوشی کے ساتھ ایکسکلوزیوبات چیت میں وزیراعظم مودی نے کشمیرکے مسائل کوصرف ڈھائی اضلاع کا مسئلہ بتایا۔

    • Share this:

      وزیراعظم نریندرمودی کا کہنا ہےکہ کشمیرکےمسائل بہت قدیم ہیں۔ اگریہ معاملہ ملک کے پہلے وزیرداخلہ سردارولبھ بھائی پٹیل کے پاس ہوتا تووادی کے موجودہ مسائل ہوتے ہی نہیں۔ یہ معاملہ پنڈت جواہرلال نہرونےاپنے پاس رکھا اورتبھی سے یہ تنازعات کا شکاررہا ہے۔ لوک سبھا الیکشن 2019 کےلئے ووٹنگ شروع ہونےسے دودن پہلے وزیراعظم نریندر مودی نے نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹران چیف راہل جوشی سے ایکسکلوزیوبات چیت میں یہ باتیں کہیں۔

      وادی کشمیرمیں طویل وقت سے جاری دہشت گردی، آرٹیکل 35 اے اور370 ہٹانے کے موضوع پروزیراعظم نےکہا ’اب تک کشمیرمیں ہمارے ہزاروں جوان شہید ہوچکے ہیں۔ بجٹ میں ریاست کی ترقی کے لئے کبھی کوئی کمی نہیں کی گئی۔ ہندوستان کی طرف سے کشمیر کے ساتھ ناانصافی کا کبھی کوئی حادثہ نہیں ہوا۔ اس پرپہلےکی حکومتوں میں کوئی نہ کوئی کمی رہی ہے۔ اس پریشانی کوسمجھ کراس کا حل نکالا جانا چاہئے۔  دوسری بات یہ ہے کہ کیا لداخ میں کوئی پریشانی ہے، نہیں ہے۔ جموں میں کوئی مسئلہ ہے، نہیں ہے۔ ویلی کے ڈھائی اضلاع میں یہ پریشانی ہے۔ ان ڈھائی اضلاع کے حادثات کو ہم پورے جموں وکشمیرکے حادثات کے طورپردیکھتے ہیں، یہ نظریہ تبدیل ہونا چاہئے۔

      راہل جوشی نے وزیراعظم مودی کوسابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کی بات ’جمہوریت، کشمیریت اورانسانیت کی بات یاد دلاتے ہوئے پوچھا، کشمیرکوترقی چاہئے، کشمیرکواعتماد بھی چاہئے، لیکن اس کےباوجود یہاں حالات مسلسل خراب ہوتے چلےگئے۔ اس پرنریندر مودی نے کہا کہ کشمیروادی میں ہورہے کام قابل تعریف ہیں، لیکن اب جموں وکشمیرمیں سرمایہ کاری ہونی چاہئے اورروزگارکے نئے مواقع پیدا ہونا چاہئے۔ وہاں آرٹیکل 35 اے یا 370 نئے روزگارمیں رکاوٹ بنے ہوئے ہیں، اس لئے کوئی سرمایہ کاری کرنے کےلئے وہاں نہیں جاتا ہے۔

      وزیراعظم مودی نے کہا کہ ان قوانین کے سبب ریاست کے لوگوں کا بہت نقصان ہوا ہے۔ پنڈت جواہرلال نہروجموں وکشمیرکی ترقی کےلئےکچھ ایسے ضوابط بنا کرگئے ہیں، جوبہت مشکلات پیدا کررہے ہیں۔ اس لئے ان کوایک بارپھرسے دیکھنے کی ضرورت ہے۔

      وزیراعظم نریندر مودی کا یہ پورا انٹرویو نیوز 18 انڈیا سمیت نیٹ ورک 18 کے سبھی چینلوں پرمنگل شام 7 بجے اوررات 10 بجے نشرکیا جائے گا۔ 
      First published: