உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    این پی اے پر کانگریس نے جھوٹ بولا، فون بینکنگ نے پہنچایا ملک کو نقصان: وزیراعظم مودی

    وزیراعظم نریندر مودی۔

    نریندر مودی نے یہاں آئی پی پی ای کا افتتاح کرنے کے بعد کہا کہ اب ان کا بھی اس بینک میں کھاتہ کھل گیاہے اورانھیں بھی کیوآر کوڈ والا کارڈ دیاگیاہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: وزیراعظم نریندرمودی نے سرکاری بینکوں کے بڑھتے ہوئےغیر فعال اثاثہ (این پی اے )کے لئے پوری طرح سے کانگریس کو ذمہ دارٹھہراتے ہوئے سنیچر کو کہاکہ پچھلی حکومت کی مدت کار میں 14۔2008کے دوران تقریبا 36لاکھ کروڑ روپئے کے قرض دیکر معیشت کو بارودی سرنگ پر بیٹھا دیاگیاتھا ،لیکن انکی حکومت ’فون بینکنگ ‘پر دئے گئے قرض کا ایک ایک پیسہ وصول کرے گی۔
      نریندر مودی نے یہاں ڈاک محکمہ کے انڈیا پوسٹ پیمنٹ بینک (آئی پی پی ای)کا افتتاح کرنے کے بعد کہاکہ اب انکا بھی اس بینک میں کھاتہ کھل گیاہے اورانھیں بھی کیوآر کوڈ والا کارڈ دیاگیاہے۔ انھوں نے طنز کرتے ہوئے کہا،’’جو کھاتانہیں ہے وہ بھی کھاتہ تورکھتاہے۔

      واضح رہے کہ نریندرمودی نےپچھلے عام انتخابات کی مہم کے دوران بدعنوانی پر لگام لگانے کا وعدہ کرتے ہوئے کہاتھا ’’نہ کھاؤں گا نہ کھانے دوں گا۔
      وزیراعظم نے سرکاری بینکوں کی کے بڑھتے ہوئے غیر فعال اثاثہ (این پی اے )کا ذکر کرتے ہوئے کہاکہ سال 2014میں انکی حکومت جب اقتدارمیں آئی تب پتہ چلا ہے کہ جسے کانگریس حکومت دولاکھ کروڑ روپئے کا این پی اے بتارہی تھی وہ دراصل 9لاکھ کروڑ روپئے تھا ۔پچھلی حکومت نے ملک کے ساتھ دھوکہ کیا اور کانگریس اور ’نامداروں ‘نے ملک کی معیشت کو بارودی سرنگ پر ڈال دیاہے ۔معیشت کو ایسی حالت میں چھوڑا گیاتھا کہ اسے سنبھالنا مشکل ہوتا ،لیکن انکی حکومت نے رات دن محنت کرکے معیشت کو باہر نکالا اور بارودی سرنگ کو ناکارہ بنادیاہے ۔
      First published: