உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خاتون کے ساتھ اجتماعی عصمت دری اور ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ! 6 افراد کے خلاف کیس درج

    ضلع کلکٹر منوج پشپ نے کہا کہ ملزمان کی جائیدادوں کا سروے کیا گیا

    ضلع کلکٹر منوج پشپ نے کہا کہ ملزمان کی جائیدادوں کا سروے کیا گیا

    اس کے بعد ملزم نے ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کی اور خاتون کے بھائی نے اسے دیکھا۔ 5 اکتوبر کو خاتون نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے چار ملزمان کو گرفتار کیا، جس میں 20 سال کا سیتارام پٹیل، 21 سال کا راج بہادر یادو، 18 سال کا سرتاج علی،اور 18 سال کا وملیش پٹیل شامل ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu | Delhi | Mumbai | Agra | Hyderabad
    • Share this:
      پولیس نے جمعرات کو مدھیہ پردیش کے ضلع ریوا میں ایک خاتون کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کرنے، اس کی فلم بنانے اور اسے سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے الزام میں چار افراد کو گرفتار کیا، جس میں دو نابالغ بھی شامل ہیں۔ ضلع انتظامیہ نے ہنومان علاقے میں تین ملزمان کے مکانات کو بھی مسمار کر دیا ہے۔

      ریوا کے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس پی) نونیت بھسین نے کہا کہ ایک 20 سالہ خاتون 1 اکتوبر کو درگا پوجا پنڈال سے واپس آرہی تھی جب چھ ملزمان نے اسے اغوا کیا اور اجتماعی عصمت دری کی۔ انہوں نے اس واقعے کی ویڈیو بنائی اور خاتون کو دھمکی دی کہ اگر اس نے پولیس میں شکایت درج کروائی تو وہ اس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دیں گے۔

      اس کے بعد ملزم نے ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کی اور خاتون کے بھائی نے اسے دیکھا۔ 5 اکتوبر کو خاتون نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے چار ملزمان کو گرفتار کیا، جس میں 20 سال کا سیتارام پٹیل، 21 سال کا راج بہادر یادو، 18 سال کا سرتاج علی،اور 18 سال کا وملیش پٹیل شامل ہیں۔ پولیس نے 17 سالہ دو افراد کو بھی دفعہ 376 (ڈی) گینگ ریپ کے تحت گرفتار کیا۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      ضلع کلکٹر منوج پشپ نے کہا کہ ملزمان کی جائیدادوں کا سروے کیا گیا اور تین ملزمین کی غیر قانونی جائیدادوں کو منہدم کر دیا گیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: