ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیجریوال حکومت کا ہر سرکاری اسکول میں پنجابی ٹیچر کی تقرری کا فیصلہ ، بی جے پی کانگریس بھڑکی

نئی دہلی : دہلی میں پنجابی زبان کو فروغ دینے کے لئے کیجریوال حکومت نے دہلی کے ہر سرکاری اسکول میں پنجابی ٹیچر کی تقرری کا فیصلہ کیا ہے۔

  • IBN7
  • Last Updated: Jun 10, 2016 01:06 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیجریوال حکومت کا ہر سرکاری اسکول میں پنجابی ٹیچر کی تقرری کا فیصلہ ، بی جے پی کانگریس بھڑکی
نئی دہلی : دہلی میں پنجابی زبان کو فروغ دینے کے لئے کیجریوال حکومت نے دہلی کے ہر سرکاری اسکول میں پنجابی ٹیچر کی تقرری کا فیصلہ کیا ہے۔

نئی دہلی : دہلی میں پنجابی زبان کو فروغ دینے کے لئے کیجریوال حکومت نے دہلی کے ہر سرکاری اسکول میں پنجابی ٹیچر کی تقرری کا فیصلہ کیا ہے۔ساتھ ہی ساتھ حکومت کی طرف سے پنجابی ٹیچروں کی تنخواہ میں اضافہ کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔ تاہم دہلی حکومت کے اس فیصلہ پر سیاست گرما گئی ہے۔ اپوزیشن نے کیجریوال پر سرکاری پیسے کے غلط استعمال کا الزام لگایا ہے۔

کانگریس کے لیڈر اجے ماکن نے ٹویٹ کر کے الزام لگایا ہے کہ دہلی میں ملازم تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے ہڑتال کر رہے ہیں اور کجریوال حکومت پنجاب میں اشتہارات پر کروڑوں خرچ کر رہی ہے ۔ ماکن نے اسے پبلسٹی اسٹنٹ بتاتے ہوئے کہا کہ حکومت اعلان کو عمل میں لے کر کب آئے گی؟

وہیں بی جے پی نے بھی سرکاری خزانے کے غلط استعمال کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی سیاسی فائدہ کے لئے سرکاری فنڈز کا غلط استعمال کر رہی ہے۔ دہلی میں بی جے پی ممبر اسمبلی وجیندر گپتا نے کہا کہ پنجاب انتخابات کو ذہن میں رکھ کر دہلی حکومت بڑے بڑے اشتہارات دے رہی ہے۔ سرکاری خزانے کو استعمال کرکے بڑے بڑے اشتہارات دیے جا رہے ہیں۔ سیاسی فائدہ لینے کے لئے عام آدمی پارٹی سرکاری فنڈز کا غلط استعمال کر رہی ہے۔

دہلی میں عام آدمی پارٹی کے ممبر اسمبلی جرنیل سنگھ نے حکومت کا موقف رکھتے ہوئے کہا کہ اگر دیگر ریاستوں میں حکومت کے کام کے اشتہارات دہلی میں لگ رہے ہیں ، تو یہاں کے اشتہارات دیگر ریاستوں میں لگنے پر اعتراض کیوں ہے؟

First published: Jun 10, 2016 01:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading