ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی میں جھگیاں توڑے جانے پر سیاست گرم، کیجریوال بولے راہل ابھی بچے ہیں

نئی دہلی۔ دہلی کی شكوربستی میں جھگیوں کو اجاڑے جانے کو لے کر سیاسی گھمسان شروع ہو گیا ہے۔

  • IBN7
  • Last Updated: Dec 14, 2015 11:31 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دہلی میں جھگیاں توڑے جانے پر سیاست گرم، کیجریوال بولے راہل ابھی بچے ہیں
نئی دہلی۔ دہلی کی شكوربستی میں جھگیوں کو اجاڑے جانے کو لے کر سیاسی گھمسان شروع ہو گیا ہے۔

نئی دہلی۔ دہلی کی شكوربستی میں جھگیوں کو اجاڑے جانے کو لے کر سیاسی گھمسان ​​شروع ہو گیا ہے۔ اس مسئلے کو عام آدمی پارٹی اور ترنمول کانگریس لوک سبھا میں اٹھائے گی۔ وہیں تمام پارٹیوں میں الزام تراشی کا دور شروع ہو گیا ہے۔ کانگریس اورعام آدمی پارٹی کے ارکان ایک دوسرے پر الزام پرمنڈھ رہے ہیں۔ وہیں عآپ، ٹی ایم سی اور جے ڈی یو نے اسے لے کر پارلیمنٹ میں حکومت کو گھیرنے کا اعلان کیا ہے۔ ریلوے کی کارروائی کو لے کر مرکزی حکومت پر حملہ بولنے کی تیاری ہے۔


عام آدمی پارٹی اورٹی ایم سی نے نے اسے لے کر تحریک التوا کی پیشکش کی ہے۔ اس کی مخالفت میں عام آدمی پارٹی اور ترنمول رہنما پارلیمنٹ احاطے میں گاندھی کے مجسمے کے باہر دھرنا دیں گے۔ وہیں دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اسے لے کر وزیر ریل سے ملاقات کا وقت مانگا ہے۔


دارالحکومت دہلی میں کڑاکے کی سردی کے درمیان شکور بستی میں جھگیاں توڑے جانے پر سیاست گرم ہوتی جا رہی ہے۔ شكوربستی کی 500 جھگیاں توڑے جانے پر عام آدمی پارٹی، جے ڈی یو اور ٹی ایم سی ایک ساتھ کھڑی نظر آ رہی ہیں۔ ایک طرف جہاں دہلی کی عام آدمی پارٹی کی حکومت جھگیوں کو توڑے جانے کو لے کر ریلوے کے بہانے مرکزی حکومت پر حملہ بول رہی ہے تو وہیں ٹی ایم سی اور جے ڈی یو نے اس معاملے کو پارلیمنٹ میں اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔


ادھر کانگریس کے نائب صدرراہل گاندھی آج شكوربستی کا دورہ کریں گے۔ راہل نے اسے لے کر عام آدمی پارٹی کی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔ راہل نے کہا کہ دہلی میں عآپ کی حکومت ہے اور وہی اس کے لئے ذمہ دار ہے۔ ادھر، کیجریوال نے راہل پر جوابی حملہ کرتے ہوئے انہیں بچہ بتا دیا۔

کیجریوال نے کہا کہ راہل گاندھی جی ابھی بچے ہیں۔ ان کی پارٹی نے شاید انہیں بتایا نہیں کہ ریلوے مرکزی حکومت کے ماتحت ہے، دہلی حکومت کے نہیں۔

 

 
First published: Dec 14, 2015 11:30 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading