உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوگی حکومت میں یو پی اردو اکادمی میں دس مہینے سے چیئرمین کا عہدہ خالی

    الہ آباد۔ یو پی میں اردو کے دو اہم سر کاری ادارے’’ یو پی ارود اکادمی ‘‘ اور ’’فخر الدین علی احمد میموریل کمیٹی‘‘ میں چیئرمین کی تقرری نہ ہونے سے ان اداروں کی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔

    الہ آباد۔ یو پی میں اردو کے دو اہم سر کاری ادارے’’ یو پی ارود اکادمی ‘‘ اور ’’فخر الدین علی احمد میموریل کمیٹی‘‘ میں چیئرمین کی تقرری نہ ہونے سے ان اداروں کی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔

    الہ آباد۔ یو پی میں اردو کے دو اہم سر کاری ادارے’’ یو پی ارود اکادمی ‘‘ اور ’’فخر الدین علی احمد میموریل کمیٹی‘‘ میں چیئرمین کی تقرری نہ ہونے سے ان اداروں کی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      الہ آباد۔ یو پی میں اردو کے دو اہم سر کاری ادارے’’ یو پی ارود اکادمی ‘‘ اور ’’فخر الدین علی احمد میموریل کمیٹی‘‘ میں چیئرمین کی تقرری نہ ہونے سے ان اداروں کی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔ یوگی حکومت کے دس مہینے گزرنے کے بعد بھی ریاستی حکومت نے اردو کے ان اداروں میں چیئرمین کے خالی عہدے پر کسی کو نامزد نہیں کیا ہے۔ ان اداروں کےمعطل ہونے سے اردوداں طبقے کی جانب سے سخت تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے ۔یو پی اردو اکادمی کو ملک کی پہلی اردو اکادمی ہونے کا اعزاز حاصل ہے ۔لیکن گزشتہ دس مہینوں سے اکادمی میں کوئی چئیرمین نہیں ہے ۔ چیئر مین کا عہدہ خالی ہونے سے اردو کی ترقی کے کئی  اہم منصوبے  ٹھپ ہو کر رہ گئے ہیں۔ اردو اکادمی کی اس بدحالی پر اردو داں طبقے کی جانب سے سخت تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے ۔


      پروفیسر شمس الرحمان فاروقی  اس صورت حال کے لئے ریاستی حکومت کے ساتھ ساتھ اردو داں عوام کو بھی ذمہ دارٹھہراتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اردو والوں کو ریاستی حکومت پر دباؤ بنانے کے لئے آگے آنا چاہئے۔


      اردو اکادمی میں چیئرمین کی تقرری نہ ہونے سے اردو کی بیشتر سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔ یوگی حکومت کو اقتدار سنبھالے دس ماہ کا عرصہ بیت گیا ہے لیکن حکومت نے ابھی تک اردو اکادمی اور فخر الدین علی احمد میموریل کمیٹی کی تشکیل نو اور اس میں چئیرمین کی تقرری کیلئے کوئی قدم نہیں اٹھایا ہے ۔


      First published: