உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    احمد بخاری کے اعلان کا اب عوام پرنہیں ہوتا ہے کوئی اثر : یحی بخاری

    لکھنؤ : آل انڈیا مسلم مجلس عمل کے سابق ریاستی صدر اور یحیبخاری کی ملاقات کے بعد اتر پردیش کی سیاست میں ایک نئے محاذ کے وجود کا امکان روشن ہوگیا ہے۔ اپریل میں ایک بڑی کانفرنس کے بعد یہ طے کیاجائے گا کہ سیاسی طور پر ایسا کون سا قدم اٹھایا جائے ، جو قوم وملت کے مفاد میں ہو۔ یحیبخاری نے واضح کردیا ہے کہ وہ نظریاتی طور پر امام احمد بخاری کے نہیں بلکہ بلال نورانی کے ساتھ ہیں۔

    لکھنؤ : آل انڈیا مسلم مجلس عمل کے سابق ریاستی صدر اور یحیبخاری کی ملاقات کے بعد اتر پردیش کی سیاست میں ایک نئے محاذ کے وجود کا امکان روشن ہوگیا ہے۔ اپریل میں ایک بڑی کانفرنس کے بعد یہ طے کیاجائے گا کہ سیاسی طور پر ایسا کون سا قدم اٹھایا جائے ، جو قوم وملت کے مفاد میں ہو۔ یحیبخاری نے واضح کردیا ہے کہ وہ نظریاتی طور پر امام احمد بخاری کے نہیں بلکہ بلال نورانی کے ساتھ ہیں۔

    لکھنؤ : آل انڈیا مسلم مجلس عمل کے سابق ریاستی صدر اور یحیبخاری کی ملاقات کے بعد اتر پردیش کی سیاست میں ایک نئے محاذ کے وجود کا امکان روشن ہوگیا ہے۔ اپریل میں ایک بڑی کانفرنس کے بعد یہ طے کیاجائے گا کہ سیاسی طور پر ایسا کون سا قدم اٹھایا جائے ، جو قوم وملت کے مفاد میں ہو۔ یحیبخاری نے واضح کردیا ہے کہ وہ نظریاتی طور پر امام احمد بخاری کے نہیں بلکہ بلال نورانی کے ساتھ ہیں۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      لکھنؤ : آل انڈیا مسلم مجلس عمل کے سابق ریاستی صدر اور یحیبخاری کی ملاقات کے بعد اتر پردیش کی سیاست میں ایک نئے محاذ کے وجود کا امکان روشن ہوگیا ہے۔ اپریل میں ایک بڑی کانفرنس کے بعد یہ طے کیاجائے گا کہ سیاسی طور پر ایسا کون سا قدم اٹھایا جائے ، جو قوم وملت کے مفاد میں ہو۔ یحیبخاری نے واضح کردیا ہے کہ وہ نظریاتی طور پر امام احمد بخاری کے نہیں بلکہ بلال نورانی کے ساتھ ہیں۔
      بلال نورانی کے استعفے کے ساتھ ہی امام احمد بخاری کی تنظیم مسلم مجلس عمل میں بکھراؤ کے آثار نمایاں ہونے لگے ہیں۔ کل امام احمد بخاری کے چھوٹے بھائی یحی بخاری نے لکھنو میں بلال نورانی سے ملاقات کی۔ انہوں نے ای ٹی وی سے گفتگو کے دوران اس حقیقت کا اعتراف بھی کیا کہ موجودہ امام کےاعلان کا اب عوام پر کوئی اثر نہیں ہوتا۔ وہ مقام جو شاہی امام عبداللہ بخاری کو حاصل تھا، اب کسی کو حاصل نہیں۔
      یحی بخاری کے ساتھ آنے سے جہاں بلال نورانی کو تقویت ملی ہے ، وہیں یہ بھی ثابت ہوگیا ہے کہ جب سگے بھائی ہی امام احمد بخاری کے ساتھ نہیں ہیں ، تو عوام ان کی آوازپر کیسے لبیک کہے گی۔
      یہاں یہ بات بھی اہم ہے کہ کئی سیاسی پارٹیاں بلال نورانی کواپنے اپنے گروپ میں شامل کرنے کے لئے دباؤ بنا رہی ہیں ۔ تاہم یہ فیصلہ وقت پر چھوڑدیا گیا ہے۔ اپریل میں ایک کل ہند کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا ، جس میں ہی مستقبل کی حکمت عملی طے کی جائے گی۔

      First published: