ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

الہ آباد میں پوسٹر وار، مایاوتی کو شورپنكھا تو سواتی کو بتایا درگا کا اوتار

الہ آباد کے سول لائن میں لگے اس پوسٹر میں لکھا ہے کہ بیٹی کے اعزاز میں سماج اترا میدان میں ۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ پوسٹر آرکشن مکت مهاسنگرام نامی ایک تنظیم کی جانب سے انوراگ شکلا نام کے طلبہ لیڈر نے چسپاں کیا ہے۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jul 26, 2016 08:11 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
الہ آباد میں پوسٹر وار، مایاوتی کو شورپنكھا تو سواتی کو بتایا درگا کا اوتار
الہ آباد کے سول لائن میں لگے اس پوسٹر میں لکھا ہے کہ بیٹی کے اعزاز میں سماج اترا میدان میں ۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ پوسٹر آرکشن مکت مهاسنگرام نامی ایک تنظیم کی جانب سے انوراگ شکلا نام کے طلبہ لیڈر نے چسپاں کیا ہے۔

الہ آباد : اتر پردیش میں انتخابات پاس آتے ہی پوسٹر وار تیز ہو گیا ہے۔ اب الہ آباد میں ایک ایسا پوسٹر سامنے آیا ہے، جس میں ماياواتي کو شورپنكھا اور بی جے پی کے سابق لیڈر دياشنكر سنگھ کی بیوی سواتی سنگھ کو درگا کا اوتار دکھایا گیا ہے۔ اس سے پہلے الہ آباد میں سونیا گاندھی سے متعلق بھی پوسٹر چسپاں کئے جاچکے ہیں۔

الہ آباد کے سول لائن میں لگے اس پوسٹر میں لکھا ہے کہ بیٹی کے اعزاز میں سماج اترا میدان میں ۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ پوسٹر آرکشن مکت مهاسنگرام نامی ایک تنظیم کی جانب سے انوراگ شکلا نام کے طلبہ لیڈر نے چسپاں کیا ہے۔ اس پوسٹر میں مایاوتی، نسیم الدین صدیقی اور بی ایس پی کے سابق لیڈر سوامی پرساد موریہ پر نشانہ سادھا گیا ہے۔

اس پوسٹر میں مایاوتی کے خلاف نازیبا الفاظ کا استعمال کرنے والے بی جے پی کے سابق لیڈر دياشنكر کو لکشمن بتایا گیا ہے اور ان کی بیوی سواتی سنگھ کو درگا کا اوتار بتایا گیا ہے جبکہ یوپی کے بی جے پی صدر کیشو پرساد موریہ کو رام کے طور پر پیش کیا گیا ہے۔

پوسٹر کے ذریعے مایاوتی پر نشانہ سادھتے ہوئے انہیں شورپنكھا کہا گیا ہے جبکہ بی ایس پی لیڈر نسیم الدین صدیقی کو راون بتایا گیا ہے۔ بی ایس پی کے سابق لیڈر سوامی پرساد کو پوسٹر میں وبھيشن کہا گیا ہے۔

First published: Jul 26, 2016 08:11 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading