உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گورنروں کو آئین کے دائرے میں قدم اٹھانا چاہئے: صدرپرنب مکھرجی

    سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی: فائل فوٹو۔

    سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی: فائل فوٹو۔

    نئی دہلی۔ صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے گورنروں سے آئین کے دائرے میں ہی تمام اقدامات کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ آئینی عہدوں پر فائز افراد کو نہ صرف منصف ہونا چاہئے، بلکہ منصفانہ نظر آنا بھی چاہیے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے گورنروں سے آئین کے دائرے میں ہی تمام اقدامات کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ آئینی عہدوں پر فائز افراد کو نہ صرف منصف ہونا چاہئے، بلکہ منصفانہ نظر آنا بھی چاہیے۔ گورنروں اور لیفٹننٹ گورنروں کے دو روزہ 47 ویں کانفرنس کے اختتامی اجلاس میں تکرار کے ساتھ کہا کہ تمام گورنروں پر آئین کو محفوظ رکھنے، محفوظ ر ہنے اور دفاع کرنے کی واجبی ذمہ داری ہے۔ اس لیے یہ ضروری ہے کہ ان کے تمام اقدامات آئین کے ضابطوں کے تحت ہوں اور آئین میں درج مثالی اقدار و اطوار کے مطابق ہوں۔ مسٹر پرنب مکھرجی نے کہا کہ "اعلی عہدوں پر فائز افراد کو نہ صرف منصف ہونا چاہئے، بلکہ انہیں منصفانہ نظر آنا بھی چاہیے"۔


      انہوں نے مشرقی ریاستوں، خاص طور پر شمال مشرق کی ریاستوں کے گورنروں سے کہا کہ وہ حکومت کی 'ایکٹ ایسٹ پالیسی' میں سرگرمی سے حصہ داری لیں۔ سڑک اور ریل نیٹ ورک کو مضبوط بناتے ہوئے شمال مشرقی ریاستوں کی کنیکٹوٹی کو درست کیا جانا چاہئے۔ صدر جمہوریہ نے چند ریاستوں کے گورنروں کی طرف سے کئے گئے خوش آئند اقدامات کو دیگر ریاستوں میں بھی آزمانے کی صلاح دی۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی سطح کی یونیورسٹیوں کے چانسلر اور وزیٹر ہونے کے ناطے گورنر ایسی یونیورسٹیوں میں بہتر معیار کی اعلی تعلیم فراہم کروانے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ اس موقع پر نائب صدر حامد انصاری نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

      First published: