ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

زمینی حقیقت سے روبرو ہونے کے بعد پی کے کانگریس کا بیڑہ پار لگائیں گے

لکھنؤ۔ اترپردیش میں کانگریس کی مسلسل قابل رحم کارکردگی کی زمینی حقیقت کا اندازہ کرنے کے بعد پارٹی کی نئی حکمت عملی بنانے کے کردار میں آنے والے پرشانت کشور عرف پی کےنے اپنی ٹیم کو اگلے سال ہونے والے ریاستی انتخابات کے لیے متعینہ مقصد کو حاصل کرنے کی نیت کے ساتھ جٹ جانے کی اپیل کی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 07, 2016 04:12 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
زمینی حقیقت سے روبرو ہونے کے بعد پی کے کانگریس کا بیڑہ پار لگائیں گے
لکھنؤ۔ اترپردیش میں کانگریس کی مسلسل قابل رحم کارکردگی کی زمینی حقیقت کا اندازہ کرنے کے بعد پارٹی کی نئی حکمت عملی بنانے کے کردار میں آنے والے پرشانت کشور عرف پی کےنے اپنی ٹیم کو اگلے سال ہونے والے ریاستی انتخابات کے لیے متعینہ مقصد کو حاصل کرنے کی نیت کے ساتھ جٹ جانے کی اپیل کی ہے۔

لکھنؤ۔  اترپردیش میں کانگریس کی مسلسل قابل رحم کارکردگی کی زمینی حقیقت کا اندازہ کرنے کے بعد پارٹی کی نئی حکمت عملی بنانے کے کردار میں آنے والے پرشانت کشور عرف پی کےنے اپنی ٹیم کو اگلے سال ہونے والے ریاستی انتخابات کے لیے متعینہ مقصد کو حاصل کرنے کی نیت کے ساتھ جٹ جانے کی اپیل کی ہے۔ رائے بریلی اور امیٹھی کو چھوڑ کر پی کے ریاست کے تمام اضلاع کے دورے کا پروگرام طے کر چکے ہیں اور ان کی ٹیم کے رکن آٹھ  سے 22 مئی کے درمیان پورے ریاست کو چھان لیں گے۔ پارٹی کے ذرائع نے بتایا کہ پی کے جلد ہی اس بارے میں تفصیلی رپورٹ پارٹی نائب صدر راہل گاندھی کو بھیجیں گے۔ رپورٹ میں اسمبلی انتخابات میں امیدواروں کے انتخاب اور تشہیری مہم سے متعلق تجاویز بھی ہوں گی جس سے پارٹی ریاست کے اقتدار میں مضبوط دعویدار بن سکتی ہے۔

واضح رہے کہ انتخاب سے قبل مهاگٹھبدھن کے قیام کے لیے پی کے پہلے ہی جنتا دل (یو)، راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی)، ترنمول کانگریس سمیت کئی چھوٹی بڑی سیاسی جماعتوں کے رابطے میں ہیں۔



اترپردیش کانگریس کمیٹی کے نائب صدر (میڈیا سیل) وریندر مدان نے آج یہاں کہا کہ وارانسی، گورکھپور اور الہ آباد ڈویژن کو چھوڑ کر ریاست کے دیگر تمام اضلاع کے مصروف دورے کے لیے پی کے نے چھ ٹیم مقرر کی ہیں۔ کشور خود بلاک کمیٹی کے صدور کے ساتھ 10 مئی کو ملاقات کریں گے جہاں کانگریس جنرل سکریٹری مدھوسودن مستری اور صدر نرمل کھتری موجود رہیں گے۔ اس کے بعد پی کے 11 مئی کو وارانسی ڈویژن کے سینئر لیڈروں کے ساتھ ملاقات کریں گے۔ اگلے دن 12 مئی کو وہ الہ آباد اور 13 کو گورکھپور ڈویژن کے رہنماؤں کے ساتھ گفتگو کریں گے۔انہوں نے کہا کہ آٹھ مئی سے 22 مئی کے درمیان پی کے کی ٹیم کے رکن دیوي پاٹن ڈویژن کے بہرائچ، بلرام پور، گونڈا، اعظم گڑھ ڈویژن کے اعظم گڑھ ، بلیا، مئو اور كاسگنج، مرزا پور ڈویژن کے مرزا پور، سنت روی داس نگر اور سون بھدر، جھانسی ڈویژن کے جھانسی، جالون اور للت پور، سہارنپور ڈویژن کے سہارنپور، مظفرنگر اور شاملی، علی گڑھ ڈویژن کے علی گڑھ، ایٹہ اور ہاتھرس، مرادآباد منڈل کے بجنور، رام پور، مرادآباد اور امروہہ کا دو روزہ دورہ کریں گے۔



اسی طرح کانپور ڈویژن کے کانپور، کانپور دیہات، فرخ آباد، اٹاوہ، قنوج اور اوريا، میرٹھ ڈویژن کے باغپت، میرٹھ، بلند شہر، هاپوڑ، غازی آباد، گوتم بدھ نگر، فیض آباد ڈویژن میں امبیڈکر نگر، سلطان پور، فیض آباد، بارہ بنکی، بستی ڈویژن میں بستی، سنت كبيرنگر ، سدھارتھ، چترکوٹ ڈویژن میں مہوبہ، حمیر پور، چترکوٹ اور باندہ، آگرہڈویژن میں فیروز آباد، مین پوری، متھرا اور آگرہ، بریلی ڈویژن میں بریلی، پیلی بھیت، بدايوں اور شاہ جہاں پور میں ٹیم کے رکن دو دنوں تک دورہ کریں گے۔


دریں اثنا ریاست کے خشک سالی سے متاثرہ علاقوں میں ریلیف کاموں میں لاپروائی کا الزام لگاتے ہوئے کانگریس نے کہا کہ سرکاری مدد اور پیسہ خشک سالی کے متاثرین کے پاس نہیں پہنچ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی کانگریس کے لیڈر بندیل کھنڈ کے خشک سالی سے متاثر اضلاع کا دورہ کر کے سرکاری مدد کا نفاذ یقینی بنائیں گے۔

First published: May 07, 2016 04:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading