உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    میوات میں 8 لوگوں نے حاملہ بکری سے کیا ریپ، بکری کی موت

    فائل فوٹو

    ہریانہ کے نوح ضلع میں ایک حاملہ بکری سے 8 لوگوں کے ریپ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ بکری کی دوسرے دن ہی موت ہوگئی۔

    • Share this:
      ہریانہ کے نوح ضلع میں ایک حاملہ بکری سے 8 لوگوں کے ریپ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ بکری کی دوسرے دن ہی موت ہوگئی۔ پولیس میں معاملہ درج کرایا گیا ہے اور 8 میں سے تین ملزمین کی شناخت ہوگئی ہے۔ خبروں کے مطابق ریپ کے ملزمان نشے کے عادی اورشرابی تھے۔ انہوں نے سنسان جگہ پر بکری سے ریپ کیا، جس کے بعد اس کی موت ہوگئی۔ نگینہ تھانے میں رپورٹ درج کرائی گئی ہے۔

      ایس آئی راج بیرسنگھ نے میڈیا کو بتایا کہ بکری کے مالک اصلو نے جمعرات کو رپورٹ درج کرائی کہ آٹھ لوگوں نے اس کی بکری چرائی اوراس سے ریپ کیا۔ اس نے بتایا کہ پانچ ملزم بھاگ گئے جبکہ تین موقع پرہی موجود رہے۔ انہوں نے اسے شکایت درج کرانے کا بھی چیلنج کیا۔

      پولیس نے دفعہ 377 اور 429 کے تحت معاملہ درج کیا ہے۔ ان کے علاوہ مویشی ظلم مخالف ایکٹ کی دفعات بھی لگائی گئی ہیں۔  ٹربیون انڈیا کی خبر کے مطابق اصلو نے دعویٰ کیا کہ ملزمین نے پہلے بھی بکری سے ریپ کی کوشش کی تھی۔

      اس نے آگے یہ بھی بتایا کہ جب ان لوگوں نے یہ حرکت کی تواس نے شورمچایا، اس کے بعد گاوں والوں نے انہیں پکڑکرپیٹا تھا۔ اس سے ناراض لوگ 8 گھنٹے بعد واپس آئے اوربکری کو لے گئے۔ پولیس نے بکری کی لاش کو آٹوپسی کے لئے بھیج دیا ہے۔ خبر ہے کہ گاوں کی پنچایت نے بھی سمجھوتے کے لئے کوششیں تیزکردی ہیں۔
      First published: