ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں وکشمیر میں آج سے نصف شب سے نافذ ہوجائے گا صدر راج

صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند نے صدرراج نافذ کرنے کی سفارش پردستخط کردیا، جس کے بعد اب حتمی طورپرصدرراج نافذ ہوجائے گا۔

  • Share this:
جموں وکشمیر میں آج سے نصف شب سے نافذ ہوجائے گا صدر راج
صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند۔

جموں وکشمیرمیں آج نصف شب سے صدر راج نافذ ہوجائے گا۔ صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند نے جموں وکشمیرمیں صدرراج نافذ کرنے کے آرڈیننس کے اعلان پردستخط کردیئے۔ اس سے قبل جموں وکشمیرمیں صدر راج 1990 سے 1996 تک نافذ تھا۔ غورطلب ہے کہ محبوبہ مفتی کی حکومت گرنے کے بعد جموں وکشمیرمیں گورنرراج  نافذ تھا۔


آج نصف شب سے گورنرراج ختم ہوجائے گا اورصدر راج نافذ ہوجائے گا۔ گورنرکی رپورٹ کے بعد مرکزی حکومت نے پیرکوصدرراج نافذ کرنے کی سفارش کردی تھی۔ صدرراج نافذ ہونے کے بعد ریاست کے تمام اختیارات پارلیمنٹ کے پاس چلے جائیں گے۔ اب گورنرکوئی بھی فیصلہ خود نہیں لے سکیں گے۔ کوئی بھی فیصلہ لینے سے قبل انہیں مرکزکی اجازت لینی ہوگی۔


واضح رہے کہ بی جے پی نے جون میں پی ڈی پی سے اپنی حمایت واپس لے لی تھی، جس کے بعد محبوبہ مفتی کی حکومت گرگئی تھی۔ تبھی سے جموں وکشمیرمیں گورنرراج نافذ ہوگیا تھا، جس کی مدت 19 دسمبرکوختم ہورہی ہے۔ حالانکہ اس دوران نیشنل کانفرنس اورکانگریس کے ساتھ مل کرپی ڈی پی نے کوشش کی تھی، لیکن اس میں وہ اسے کامیابی نہیں ملی تھی کیونکہ گورنرستیہ پال ملک نے اسمبلی تحلیل کرنے کا اعلان کردیا تھا۔




پی ڈی پی کے ذریعہ حکومت بنانے کے لئے دعویٰ پیش کئے جانے کے بعد گورنرکے ذریعہ اسمبلی تحلیل کرنے پرانہیں سخت اعتراضات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اسمبلی تحلیل کرنے کے بعد گورنرستیہ پال ملک نے ایک تقریب کے دوران بڑا انکشاف کرتے ہوئے کہا تھا کہ مرکزجموں وکشمیرمیں سجاد غنی لون کو وزیراعلیٰ بنانا چاہتا تھا، لیکن ہم نے مرکزکے اشارے پرفیصلہ نہیں کیا۔ اس کے بعد انہوں نے یہ بھی خدشہ ظاہرکیا تھا کہ ان کا ٹرانسفرکیا جاسکتا ہے۔
First published: Dec 19, 2018 08:08 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading