ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اروناچل میں صدر راج پر کانگریس کا تیکھا ردعمل ، صدر جمہوریہ سے ملاقات کریں گی سونیا گاندھی

نئی دہلی : اروناچل پردیش میں صدر راج کے نفاذ سے متعلق مرکزی حکومت کے فیصلے کو کانگریس نے آئینی مینڈیٹ کا مذاق ، وفاقیت کی شکست اور جمہوریت کا قتل قرار دیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ کانگریس کا ایک وفد پارٹی صدر سونیا گاندھی کی قیادت میںمنگل کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی سے بھی ملاقات کرے گا۔

  • News18
  • Last Updated: Jan 25, 2016 02:51 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اروناچل میں صدر راج پر کانگریس کا تیکھا ردعمل ، صدر جمہوریہ سے ملاقات کریں گی سونیا گاندھی
نئی دہلی : اروناچل پردیش میں صدر راج کے نفاذ سے متعلق مرکزی حکومت کے فیصلے کو کانگریس نے آئینی مینڈیٹ کا مذاق ، وفاقیت کی شکست اور جمہوریت کا قتل قرار دیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ کانگریس کا ایک وفد پارٹی صدر سونیا گاندھی کی قیادت میںمنگل کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی سے بھی ملاقات کرے گا۔

نئی دہلی : اروناچل پردیش میں صدر راج کے نفاذ سے متعلق مرکزی حکومت کے فیصلے کو کانگریس نے آئینی مینڈیٹ کا مذاق ، وفاقیت کی شکست اور جمہوریت کا قتل قرار دیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ کانگریس کا ایک وفد پارٹی صدر سونیا گاندھی کی قیادت میںمنگل کو صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی سے بھی ملاقات کرے گا۔


سابق مرکزی وزیر آر پی این سنگھ نے مرکز کے اس فیصلے پر حکمراں پارٹی بی جے پی پر تیکھا حملہ کیا اور کہا کہ وہ شمال مشرق میں اقتدار حاصل کرنے کی جلدبازی میں ہے۔ آر پی این سنگھ نے اروناچل سے متعلق مرکز کے اس قدم کو جمہوریت کا قتل قرار دیا ہے ۔


ادھر ریاست میں کانگریس کے انچارج اور سابق مرکزی وزیر نارائن سامی نے بتایا کہ انہیں اس بات کی معلومات میڈیا کے ذریعے ملی ہے۔ سامی نے کہا کہ وزیر اعلی کو اعتماد میں لئے بغیر ہی مرکز نے صدر راج کے نفاذ کی سفارش کر دی۔ راج بھون کو اس وقت بی جے پی کے هیڈكورٹر میں تبدیل کر دیاگیا ہے اور گورنر پارٹی کے ایجنٹ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ سامی نے کہا کہ کانگریس اس معاملے میں قانونی مشورہ لے گی۔


تاہم مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے اس معاملے میں حکومت کا دفاع کیا ہے اور کہا کہ ریاست میں بحران کے حالات پر مرکز اپنا کام کر رہا ہے۔

First published: Jan 25, 2016 02:51 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading