ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کسانوں کے احتجاج کو لے کر پرینکا کا مودی حکومت پر حملہ، بولیں۔ ان داتا کو دہشت گرد کہنا گناہ

پرینکا نے کہا کہ کسان کو دہشت گرد کہنا بہت بڑا گناہ ہے۔ یہ گناہ نہ وزیر اعظم کو کرنا چاہئے اور نہ ہی ان کی حکومت کو کرنا چاہئے۔

  • Share this:
کسانوں کے احتجاج کو لے کر پرینکا کا مودی حکومت پر حملہ، بولیں۔ ان داتا کو دہشت گرد کہنا گناہ
پرینکا گاندھی کی فائل فوٹو

رام پور۔ 26 جنوری کو دلی میں نکالی گئی ٹریکٹر ریلی میں مارے گئے کسان نوریت سنگھ کے کنبوں سے ملنے رام پور پہنچیں کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مودی حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم مودی کہتے ہیں کہ کسان ایک فون کال کی دوری پر ہیں تو پھر ان سے بات کیوں نہیں کی جاتی ہے۔ پرینکا نے کہا کہ کسان کو دہشت گرد کہنا بہت بڑا گناہ ہے۔ یہ گناہ نہ وزیر اعظم کو کرنا چاہئے اور نہ ہی ان کی حکومت کو کرنا چاہئے۔


مہلوک کسان کے کنبوں سے ملنے کے بعد میڈیا کے ساتھ بات چیت میں پرینکا گاندھی نے کہا کہ میں نے ان کے کنبے اور دادا جی سے بات کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ایک واضح اور عدالتی جانچ ہونی چاہئے۔ ہم پوری طرح سے کسانوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ ان سب کسانوں کے ساتھ بھی جو دلی کے بارڈر پر بیٹھے ہیں۔ سب سے بڑا جرم یہ ہے کہ حکومت پہچان نہیں رہی ہے۔ یہ تحریک سچی ہے اس میں کوئی سیاست نہیں ہے۔ یہ کسانوں کا درد ہے، اس کا احترام کرنا پڑے گا۔ اگر احترام نہیں کیا تو پھر پورے ملک کے کسان اکھٹے ہو جائیں گے۔


کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے کہا کہ آج اتنی ساری گاڑیاں آئی ہیں، میں نے انہیں بلایا نہیں ہے۔ اگر آپ اس بارڈر کی فوٹو دیکھیں تو ایسا لگتا ہے ملک کا بارڈر ہے کیا کہہ رہا ہے یہ کسان؟ وہ یہی کہہ رہا ہے مجھ سے بات چیت کر لو۔ میرے لئے قانون بنا رہے ہو تو مجھ سے بات چیت کر لو۔ لیکن اقتدار کا غرور اتنا بڑھ گیا ہے کہ وہ عوام کو بھول جاتا ہے۔ ہو سکتا ہے وزیر اعظم کے ارد گرد کے لوگ انہیں بتاتے نہیں ہوں گے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Feb 04, 2021 04:15 PM IST