ہوم » نیوز » No Category

ترکی میں باغیوں کے خلاف کارروائی کو پروفیسر عرشی خان نے بتایا صحیح

نئی دہلی : ترکی میں باغیوں کے خلاف کارروائی کی جہاں بین الاقوامی امور کے ماہر ین تنقید کررہے ہیں ، وہیں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے ماہر پروفیسر عرشی خان نے ترکی کے صدر رجب طیب اردگان کی کارروائی کی حمایت کی ۔

  • ETV
  • Last Updated: Aug 10, 2016 10:40 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ترکی میں باغیوں کے خلاف کارروائی کو پروفیسر عرشی خان نے بتایا صحیح
نئی دہلی : ترکی میں باغیوں کے خلاف کارروائی کی جہاں بین الاقوامی امور کے ماہر ین تنقید کررہے ہیں ، وہیں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے ماہر پروفیسر عرشی خان نے ترکی کے صدر رجب طیب اردگان کی کارروائی کی حمایت کی ۔

نئی دہلی : ترکی میں باغیوں کے خلاف کارروائی کی جہاں بین الاقوامی امور کے ماہر ین تنقید کررہے ہیں ، وہیں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے ماہر پروفیسر عرشی خان نے ترکی کے صدر رجب طیب اردگان کی کارروائی کی حمایت کی ۔

اسلامک آبجیکٹو اسٹڈیز کی جانب سے فوجی بغاوت کے بحران میں جمہوریہ ترکی کی کارروائی جائز یا ایک قسم کی دہشت گردی کے موضوع پر ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا ۔ مہمان خصوصی کے طورپر بین الاقوامی امور کے ماہر پروفیسر عرشی خان نے ترکی کے صدر کے ذریعہ باغیوں کے خلا ف کاروائی کی حمایت کی۔ انھوں نے کہا کہ اگرایسا نہیں کیا ، تو ترکی محفوظ نہیں رہے گا۔

پروگرام کے دوران ترکی میں بغاوت کے لئے عالمی طاقتوں پر بھی سوالات اٹھائے گئے اور ترکی کے عوام کو مبارکباد دی گئی کہ نہ صرف انھوں نے ترکی کو بغاوت بچایا ، بلکہ جمہوریت کی بھی حفاظت کی ۔ شرکا نے بغاوت کو ایک قسم کی دہشت گردی قراردیا۔ مقررین نے کہا کہ ترکی میں بغاوت اور بغاوت کی ناکامی میں عام لوگوں کے کردار کو قابل تحسین نظروں سے دیکھا جارہا ہے ۔ تاہم اگر باغیوں کے خلاف کارروائی میں معصوموں کو نشانہ بنایا گیا ، تو صدر کو ملنے والی حمایت مخالفت میں بدل جائے گی ۔

First published: Aug 10, 2016 10:40 PM IST