உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طلاق ثلاثہ کو سیاسی ہاکی کی گیند نہ بنایا جائے : پروفیسر طاہرمحمود

    ممتاز ماہر قانون اور قومی اقلیتی کمیشن کے سابق سربراہ پروفیسر طاہرمحمود: فائل فوٹو۔

    ممتاز ماہر قانون اور قومی اقلیتی کمیشن کے سابق سربراہ پروفیسر طاہرمحمود: فائل فوٹو۔

    ممتاز قانون داں اور قومی اقلیتی کمیشن کے سابق چیرمین پروفیسر طاہر محمودنے کہا ہے کہ ’’ آئینی، قانونی اور شرعی نوعیت کے اس ایشو کو سیاسی ہاکی کے کھیل کی گیند بناناانتہائی غلط بات ہے

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : یوپی کے الیکشن کیلئے جاری کردہ بی جے پی کے مینی فسٹو میں طلاق ثلاثہ کے ذکر پر میڈیا کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے ممتاز قانون داں اور قومی اقلیتی کمیشن کے سابق چیرمین پروفیسر طاہر محمودنے کہا ہے کہ ’’ آئینی، قانونی اور شرعی نوعیت کے اس ایشو کو سیاسی ہاکی کے کھیل کی گیند بناناانتہائی غلط بات ہے‘‘۔
      انھوں نے معاملے کی وضاحت کرتے ہوئے مزید کہا کہ طلاق ثلاثہ یوپی کے مسلمانوں کا مقامی مسئلہ تو ہے نہیں کہ اسے خواہ مخواہ وہاں کی انتخابی سیاست میں گھسیٹا جائے، اسکا تعلق تو ہندوستان کی پوری امّت مسلمہ سے ہے اور اس میں سیاسی دخل اندازی کی نہ کوئی ضرورت ہے نہ جواز، معاملہ عدالت عظمیٰ میں زیر سماعت ہے اور اسے ہی اسکا فیصلہ کرنے دیا جائے۔
      First published: