உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنجاب میں شہری سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے BJP ، دیہی سیٹوں پر مورچہ سنبھالیں گے کیپٹن

    پنجاب میں شہری سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے BJP ، دیہی سیٹوں پر مورچہ سنبھالیں گے کیپٹن

    پنجاب میں شہری سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے BJP ، دیہی سیٹوں پر مورچہ سنبھالیں گے کیپٹن

    Punjab Assembly Election 2022 : پنجاب میں بی جے پی (BJP) کے سابق وزیر اعلی کیپٹن امریندر سنگھ (Captain Amarinder Singh) کی پنجاب لوک کانگریس (Punjab Lok Congress) ( پی سی ایل ) کے ساتھ اتحاد میں پنجاب کی شہری اسمبلی سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے ۔

    • Share this:
      چنڈی گڑھ : پنجاب میں بی جے پی (BJP) ، سابق وزیر اعلی کیپٹن امریندر سنگھ (Captain Amarinder Singh) کی پنجاب لوک کانگریس (Punjab Lok Congress) کے ساتھ اتحاد میں پنجاب کی شہری اسمبلی سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے ۔ بی جے پی کے اعلی سطحی ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیر اعلی کی پنجاب لوک کانگریس دیہی علاقوں میں اسمبلی سیٹوں سے اپنا امیدوار اتارے گی ۔ دونوں پارٹیوں نے اسمبلی الیکشن ایک ساتھ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے ، لیکن انہوں نے ابھی تک سیٹ تقسیم کے فارمولہ کا اعلان نہیں کیا ہے ۔ ذرائع نے دعوی کیا کہ پنجاب کے سابق وزیر اعلی کیپٹن امریندر سنگھ کے پیر کو بی جے پی کے سینئر لیڈروں سے ملنے اور فارمولہ کو آخری شکل دینے کا امکان ہے ۔

      پنجاب میں ایک سیاسی طاقت بننے کی کوشش میں بی جے پی کو آنے والے انتخابات میں سبھی شہری اسمبلی سیٹیں ملنے کا امکان ہے ۔ بی جے پی ان شہری اسمبلی سیٹوں کو جتینے کیلئے انتخابی تشہیر میں سخت محنت کررہی ہے ۔ ذرائع نے دعوی کیا کہ بی جے پی کو سیٹوں میں ایک بڑا حصہ ملے گا اور امید ہے کہ وہ آدھی سے زیادہ سیٹوں پر الیکشن لڑے گی ۔ بی جے پی کے ایک لیڈر نے کہا کہ ہمارے پاس اکثریت کا حصہ ہوگا اور زیادہ تر اسمبلی سیٹیں شہری اور نیم شہری علاقے میں ہیں ۔ تین درجن سے زیادہ شہری سیٹیں ہیں اور ہمیں سبھی سیٹیں ملنے کا امکان ہے ۔ ہمیں کچھ نیم شہری سیٹیں بھی مل سکتی ہیں ۔

      اس مہینے کے شروع میں بی جے پی اور سابق وزیر اعلی امریندر سنگھ نے آئندہ اسمبلی انتخابات ایک ساتھ لڑنے کا اعلان کیا تھا ۔ کپتان نے کہا تھا کہ ہمارا اتحاد کنفرم ہو گیا ہے ۔ صرف سیٹوں کی تقسیم کی بات چل رہی ہے ۔ انہوں نے کہا تھا کہ ہم دیکھیں گے کہ کون کونسی سیٹوں پر الیکشن لڑے گا اور جیت ہی سیٹوں کا فیصلہ کرنے کا واحد معیار ہے ۔ بی جے پی جہاں سے الیکشن لڑے گی ، ہم اس کی حمایت کریں گے اور وہ ہمیں ان سیٹوں پر ساتھ دیں گے جہاں سے ہم الیکشن لڑیں گے ۔

      اترپردیش، اتراکھنڈ، منی پور اور گوا کے ساتھ اگلے سال فروری مارچ میں پنجاب میں انتخابات ہوں گے ۔ اس سے پہلے اپنے سب سے پرانے اتحادی شرومنی اکالی دل سے اتحاد توڑنے کے بعد بی جے پی نے پنجاب کی تمام 117 اسمبلی سیٹوں پر الیکشن لڑنے کا اعلان کیا ۔ 2017 میں بی جے پی نے 23 میں سے تین سیٹوں پر جیت حاصل کی تھی ۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔

      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: