உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Punjab: پنجاب کے گھرانوں کو آج سے 300 یونٹ بجلی ملے گی مفت، وزیراعلیٰ بھگونت مان نے کیا اعلان

    پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان (فائل فوٹو)

    پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان (فائل فوٹو)

    پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ پچھلی حکومتیں انتخابات میں وعدے کرتی تھیں وعدوں کی تکمیل میں پانچ سال گزر جاتے تھے لیکن ہماری حکومت نے پنجاب کی تاریخ میں ایک نئی مثال قائم کی ہے۔

    • Share this:
      پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان (Bhagwant Mann) نے کہا کہ ان کی حکومت ریاست کے لوگوں کو دی گئی ضمانت کو پورا کر رہی ہے کیونکہ جمعہ سے ہر گھر کو ہر ماہ 300 یونٹ مفت بجلی ملے گی۔ آپ (AAP) حکومت نے پہلے 1 جولائی سے ہر گھر کو 300 یونٹ مفت بجلی دینے کا اعلان کیا تھا۔

      بھگونت مان نے کہا کہ پچھلی حکومتیں انتخابات میں وعدے کرتی تھیں وعدوں کی تکمیل میں پانچ سال گزر جاتے تھے لیکن ہماری حکومت نے پنجاب کی تاریخ میں ایک نئی مثال قائم کی ہے۔ آج ہم پنجابیوں کو دی گئی ایک اور گارنٹی پوری کرنے جا رہے ہیں۔ آج سے پنجاب میں ہر خاندان کو ماہانہ 300 یونٹ مفت بجلی ملے گی۔

      انھوں نے کہا کہ ہر گھر کو ہر ماہ 300 یونٹ مفت بجلی دینا عام آدمی پارٹی کے 2022 کے پنجاب اسمبلی انتخابات کے دوران کیے گئے کلیدی وعدوں میں سے ایک تھا۔

      اے اے پی لیڈر اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ راگھو چڈھا نے کہا کہ لوگوں کو مفت بجلی فراہم کرنے والی دہلی کے بعد پنجاب دوسری ریاست بن گئی ہے۔ آج ایک تاریخی دن ہے کیونکہ پنجاب دہلی کے بعد دوسری ریاست بن گیا ہے جہاں لائف لائن بجلی مفت ملتی ہے۔ 'کیجریوال دی پہلی (پہلی) گارنٹی' پنجابیوں کے لیے ایک حقیقت بن گئی۔

      مزید پڑھیں: Agneepath Recruitment: انڈین آرمی میں اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی 2022، جانیے تفصیلات

      وزیر خزانہ ہرپال سنگھ چیمہ نے 27 جون کو اے اے پی حکومت کا پہلا بجٹ پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ 300 یونٹ مفت بجلی فراہم کرنے سے ریاستی خزانے پر 1,800 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ AAP حکومت پنجاب کے عوام کو دی گئی اپنی پہلی گارنٹی کو پورا کر رہی ہے جو کہ یکم جولائی سے پنجاب کے تمام شہریوں کو ماہانہ 300 یونٹ گھریلو بجلی کی فراہمی مفت فراہم کر رہی ہے۔

      مزید پڑھیں: Agnipath Scheme: مرکز اور ریاستی سرکاروں کے 'اگنی ویروں' کیلئے اہم اعلانات

      چیمہ نے کہا کہ اس سے پنجابیوں کو بڑی راحت ملے گی، جو بجلی کے بے تحاشا بلوں کی زد میں ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ریاستی حکومت نے پہلے ہی فضول خرچی کو کم کرکے اور اپنے ٹیکس ریونیو میں اضافہ کرکے اس اسکیم کو فنانس کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: