உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنجاب نیشنل بینک کو ہندستانی بینکنگ کی تاریخ میں سب سے زیادہ 5367.14کروڑ روپے کا نقصان

    نئی دہلی۔  غیر منفع بخش اثاثہ (این پی اے) میں تیزی سے اضافہ کی وجہ سے پنجاب نیشنل بینک کو 31 مارچ کو ختم مالی سال کی آخری سہ ماہی میں 5367.14 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔

    نئی دہلی۔ غیر منفع بخش اثاثہ (این پی اے) میں تیزی سے اضافہ کی وجہ سے پنجاب نیشنل بینک کو 31 مارچ کو ختم مالی سال کی آخری سہ ماہی میں 5367.14 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔

    نئی دہلی۔ غیر منفع بخش اثاثہ (این پی اے) میں تیزی سے اضافہ کی وجہ سے پنجاب نیشنل بینک کو 31 مارچ کو ختم مالی سال کی آخری سہ ماہی میں 5367.14 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  غیر منفع بخش اثاثہ (این پی اے) میں تیزی سے اضافہ کی وجہ سے پنجاب نیشنل بینک کو 31 مارچ کو ختم مالی سال کی آخری سہ ماہی میں 5367.14 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔ مالی سال 2014-15 کی اسی سہ ماہی میں اس نے 306.56 کروڑ روپے کا خالص منافع کمایا تھا۔ نقصان میں ہونے کی وجہ سے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے حصص یافتگان کو کوئی منافع نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔


      بورڈ آف ڈائریکٹرز کی آج یہاں ایک میٹنگ کے بعد بینک نے سہ ماہی اور سالانہ مالیاتی اعداد و شمار جاری کئے۔ اس کے مطابق، بینک کا مجموعی این پی اے 31 مارچ 2015 کے 25694.86 کروڑ روپے (کل قرض 6.55 فیصد) سے بڑھ کر 31 مارچ 2016 کو 55818.33 کروڑ روپے (12.90 فیصد) پر پہنچ گیا۔ خالص این پی اے بھی 4.06 فیصد سے بڑھ کر 8.61 فیصد پر پہنچ گیا۔ سہ ماہی کے دوران اس کی کل آمدنی بھی 13455.65 کروڑ روپے کے مقابلے میں 1.33 فیصد گھٹ کر 13276.19 کروڑ روپے رہ گئی۔ پورے مالی سال کے دوران مجموعی طور پر بنیاد پر بینک کو 3689.77 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔


      مالی سال 2014-15 میں اسے 3399.60 کروڑ روپے کا فائدہ ہوا تھا۔ اس دوران اس کی کل آمدنی میں 5.28 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ یہ 54884.42 کروڑ روپے سے بڑھ کر 57780.47 کروڑ روپے پر پہنچ گئی ہے۔

      First published: