உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنجاب کے شاہی امام مولانا عثمان لدھیانوی کا انتقال، بعد نماز عشا 8:30 بجے ادا ہوگی نماز جنازہ

    مولانا عثمان لدھیانوی  (Moulana Muhammad Usman Rehmani Ludhianvi )  کی نماز جنازہ فیلڈ گنج چوک جامع مسجد کے باہر 10 ستمبر کو رات 8:30 بجے ادا کی جائے گی۔

    مولانا عثمان لدھیانوی (Moulana Muhammad Usman Rehmani Ludhianvi ) کی نماز جنازہ فیلڈ گنج چوک جامع مسجد کے باہر 10 ستمبر کو رات 8:30 بجے ادا کی جائے گی۔

    مولانا عثمان لدھیانوی (Moulana Muhammad Usman Rehmani Ludhianvi ) کی نماز جنازہ فیلڈ گنج چوک جامع مسجد کے باہر 10 ستمبر کو رات 8:30 بجے ادا کی جائے گی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      پنجاب  کے شاہی امام مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی (Moulana Muhammad Usman Rehmani Ludhianvi) کا دیر رات لدھیانہ میں انتقال Shahi Imam Death ہوگیا ہے۔ مولانا عثمان لدھیانوی کی نماز جنازہ فیلڈ گنج چوک جامع مسجد کے باہر 10 ستمبر کو رات 8:30 بجے ادا کی جائے گی۔ پنجاب شاہی امام نے  تقریبا 12:10 بجے  سی ایم سی CMC میں آخری سانس ۔  وہ کئی دنوں سے بیمار تھے، یہ معلومات ان کے بھائی حبیب الرحمن نے دی۔

      شاہی امام مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی کے اچانک چلے جانے سے ان کا خاندان اور مسلم معاشرہ کو  بڑا صدمہ لگا ہے۔ پنجاب کے کابینہ کے وزیر بھارت بھوشن آشو ، رکن پارلیمنٹ روونیتی سنگھ بٹو ، ایم ایل اے سریندر داوڑ ، ایم ایل اے راکیش پانڈے ، میئر بلکار سنگھ سندھو اور دیگر لیڈران نے شاہی امام کے انتقال پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔


      وہ مسلم کمیونٹی کی بلند آواز تھے
      یہ بات قابل ذکر ہے کہ شاہی امام نے فلم سفنا کے گانے 'قبول ہے' میں لفظ 'رسول' استعمال کرنے کے بعد اداکار ایمی ورک اور مصنف جانی کے خلاف مارچ کیا تھا۔
      یہ بات قابل ذکر ہے کہ شاہی امام نے فلم سفنا کے گانے 'قبول ہے' میں لفظ 'رسول' استعمال کرنے کے بعد اداکار ایمی ورک اور مصنف جانی کے خلاف مارچ کیا تھا۔ ایک لڑکی جسنور نے لفظ رسول پر اعتراض کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس سے مسلم معاشرے کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں ، اس لیے ایمی ورک اور مصنف  جانی کو معافی مانگنی چاہئے۔ جسنور نے جامع مسجد لدھیانہ کے نائب شاہی امام مولانا عثمان لدھیانوی سے شکایت کی تھی۔ تاہم ، ایمی ورک اور جانی نے نائب شاہی امام سے ملاقات کی اور اس غلطی پر معافی مانگتے ہوئے تنازعہ ختم کیا تھا۔ شاہی امام  تب مانے  جب اداکار اور مصنف نے معافی مانگی۔ وہ مسلم کمیونٹی کی بلند آواز تھے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: