ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کسانوں کی قرض معافی پرراہل گاندھی نے کہا "ہم نے بی جے پی کے دو وزرائے اعلیٰ کونیند سے بیدارکردیا"۔

مدھیہ پردیش میں اورچھتیس گڑھ میں حکومت بنتے ہی وزیراعلیٰ کمل ناتھ اوربھوپیش بگھیل نے کسانوں کے قرض معاف کردیئے ہیں۔ کانگریس کے اس فیصلے کے بعد گجرات اورآسام حکومت نے بھی کسانوں پرمہربانی دکھائی۔

  • Share this:
کسانوں کی قرض معافی پرراہل گاندھی نے کہا
راہل گاندھی: فائل فوٹو

کسانوں کے قرض معافی کے مدعے پرکانگریس صدرراہل گاندھی نے کہا ہے کہ ان کے قدم نے بی جے پی کے دو وزرائے اعلیٰ کو نیند سے بیدارکردیا ہے۔ واضح رہے کہ کانگریس نے دو ریاستوں میں نئی حکومت بنانے کے بعد کسانوں کا قرض معاف کردیا ہے۔ مدھیہ پردیش اورچھتیس گڑھ میں حکومت سازی کے فوراً بعد ہی کسانوں کے قرض معافی پردستخط کردیئے گئے۔


راہل گاندھی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا "کانگریس پارٹی نے آسام اورگجرات کے وزرائے اعلیٰ کو نیند سے بیدار کردیا ہے۔ وزیراعظم ابھی بھی سورہے ہیں، ہم انہیں بھی بیدارکریں گے"۔ راہل گاندھی کا یہ ٹوئٹ ایک طرح سے کانگریس کے ذریعہ بی جے پی پردباو بنانے جیسا ہے۔


واضح رہے کہ مدھیہ پردیش میں حکومت بنتے ہی وزیراعلیٰ کمل ناتھ اورچھتیس گڑھ کے وزیراعلیٰ بھوپیش بگھیل نے کسانوں کے قرض معاف کردیئے ہیں۔ کانگریس کے وزرائے اعلیٰ کے اس فیصلے کے بعد گجرات حکومت نے بھی کسانوں پرمہربانی دکھائی۔ گجرات حکومت نے کسانوں کا قرض تومعاف نہیں کیا، لیکن بجلی کے بل ضرورمعاف کردیئے۔ گجرات حکومت نے کسانوں پربقایا 650 کروڑروپئے کا بجلی کا بل معاف کردیا ہے۔




آپ کو بتادیں کہ منگل کو آسام حکومت نے بھی کسانوں کا قرض معاف کرنے کا اعلان کیا۔ اس قرض معافی کا فائدہ تقریباً 8 لاکھ  کسانوں کو مل سکتا ہے، جس سے حکومت پر600 کروڑروپئے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ کانگریس صدرراہل گاندھی نے منگل کو کہا تھا کہ وہ وزیراعظم نریندرمودی پردباو ڈال کرملک کے ہرکسان کا قرض معاف کروائیں گے۔
First published: Dec 19, 2018 02:35 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading