உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وراٹ کوہلی کی حمایت میں آئے راہل گاندھی ، ٹویٹ کرکے کہا : یہ نفرت سے بھرے لوگ ہیں، معاف کردو

    وراٹ کوہلی کی حمایت میں آئے راہل گاندھی ، ٹویٹ کرکے کہا : یہ نفرت سے بھرے لوگ ہیں، معاف کردو

    وراٹ کوہلی کی حمایت میں آئے راہل گاندھی ، ٹویٹ کرکے کہا : یہ نفرت سے بھرے لوگ ہیں، معاف کردو

    Team india in T20 World Cup: ٹیم انڈیا کی ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں خراب کارکردگی کے بعد کپتان وراٹ کوہلی کی بیٹی کیلئے دھمکی دینے والوں کو راہل گاندھی نے کرارا جواب دیا ہے ۔ راہل نے ٹویٹ کرکے لکھا کہ یہ لوگ نفرت سے بھرے ہیں ، انہیں معاف کردو ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ٹیم انڈیا کی ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں خراب کارکردگی کے بعد کپتان وراٹ کوہلی کی بیٹی کیلئے دھمکی دینے والوں کو راہل گاندھی نے کرارا جواب دیا ہے ۔ راہل نے ٹویٹ کرکے لکھا کہ یہ لوگ نفرت سے بھرے ہیں ، انہیں معاف کردو ۔ ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں ہندوستانی کرکٹ ٹیم کی لگاتار دو ہار کے بعد ہندوستانی فینس ٹیم انڈیا کو نشانہ بنا رہے ہیں ۔ اس درمیان کچھ غیر سماجی عناصر نے ٹیم انڈیا کے کپتان وراٹ کوہلی کے کنبہ کو جان سے مارنے کی دھمکی دی ہے ۔ یہی نہیں سوشل میڈیا پر کچھ نے وراٹ کی بیٹی کی آبروریزی کے بعد قتل کرنے کی بھی دھمکی دے ڈالی ۔ اس شرمناک بیان بازی کو لے کر کئی لوگ وراٹ کوہلی کی حمایت میں آئے ہیں ۔

      اس کے بعد کانگریس ممبر پارلیمنٹ راہل گاندھی نے ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی کی حمایت میں ٹویٹ کیا ۔ راہل گاندھی نے موجودہ ٹی ٹوینٹی میں پاکستان سے ہار کے پیش نظر ٹیم انڈیا کے کرکٹر محمد سمیع کی حمایت میں بھی اپنی بات رکھی تھی ۔ منگل کی شام کو راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا کہ ڈیئر وراٹ ، یہ لوگ نفرت سے بھرے ہوئے ہیں ، کیونکہ کوئی انہیں پیار نہیں دیتا ۔ انہیں معاف کردو ، ٹیم کا تحفظ کرو ۔


      وہیں دوسری طرف وراٹ کوہلی کے کنبہ کو دھمکی دینے کے معاملہ میں دہلی خاتون کمیشن نے ایکشن لیا ہے ۔ خاتون کمیشن نے دہلی پولیس کو نوٹس بھیج کر وراٹ کوہلی کی بیٹی کیلئے دھمکی آمیز باتیں کرنے کے معاملہ میں فورا کارروائی کیلئے کہا ہے ۔ کمیشن کی صدر نے کہا کہ وراٹ کوہلی اور بالی ووڈ اداکارہ انوشکا شرما کی بیٹی کے خلاف دھمکی انتہائی شرمناک ہے ۔ دھمکی دینے والوں کو سزا ملنی چاہئے ۔

      خاتون کمیشن نے دہلی پولیس کو بھیجے نوٹس میں پوچھا ہے کہ اگر معاملہ میں کوئی ملزم گرفتار نہیں ہوا ہے تو برائے کرم بتائیں کہ ملزم کی گرفتاری کیلئے کیا قدم اٹھائے جارہے ہیں ؟ کمیشن نے دہلی پولیس کو آٹھ نومبر تک جانکاری دستیاب کرانے کیلئے کہا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: