உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Rahul Gandhi: راہل گاندھی منی لانڈرنگ کیس میں ای ڈی کےسامنےہوں گےپیش، ریلی کیلئےکانگریس کو اجازت نہیں

    کانگریس کا کہنا ہے کہ یہ محض ایک سیاسی کھیل ہے

    کانگریس کا کہنا ہے کہ یہ محض ایک سیاسی کھیل ہے

    یہ پہلی بار نہیں ہے کہ راہول گاندھی نے دڑو چٹائی (ڈرو مت) کو اپنی ٹیگ لائن بنائی ہے کیونکہ وہ خود کو ایسے شخص کے طور پر پیش کرنا چاہتے ہیں جو حکومت پر بار بار تنقید کرتا ہو۔ وہ آر ایس ایس کی طرف سے ہتک عزت کے نوٹس پر سمن میں شرکت کر رہے ہیں، یہ کہتے ہوئے کہ وہ معافی نہیں مانگیں گے۔

    • Share this:
      کانگریس ورکنگ کمیٹی (All Congress Working Committee) کے تمام کارکنان اور اراکین پارلیمنٹ نے پارٹی لیڈر راہول گاندھی (Rahul Gandhi) کے ساتھ آج 13 جون بروز پیر دہلی میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (Enforcement Directorate) کے دفتر تک مارچ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جن سے نیشنل ہیرالڈ۔ اے جے ایل ڈیل (National Herald-AJL deal) سے متعلق منی لانڈرنگ کیس کے سلسلے میں پوچھ گچھ کی جانی ہے۔

      اس دوران پارٹی کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کے ذریعہ ایجنسی کے مبینہ غلط استعمال کے خلاف ہندوستان بھر میں ای ڈی کے تمام ریاستی دفاتر کے سامنے ایک ستیہ گرہ یا دھرنا بھی 'طاقت کے مظاہرہ' کے طور پر منعقد کیا جائے گا۔

      تاہم دہلی پولس نے کانگریس کو ایک ریلی نکالنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے جو آج پارٹی کے لیڈروں اور کارکنوں کو اے آئی سی سی ہیڈکوارٹر سے ای ڈی آفس تک ضلع میں فرقہ وارانہ اور امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر نکالی جانی تھی۔

      کانگریس کا کہنا ہے کہ یہ محض ایک سیاسی کھیل ہے اور بی جے پی کی طرف سے پی ایم مودی کی مخالفت کرنے والوں کے خلاف مرکزی ایجنسیوں کا غلط استعمال ہے۔ اس نے ملک کے خزانے سے ایک پیسہ بھی نہیں لیا تھا۔ان کو ای ڈی کے سمن کو گاندھی خاندان کے ردعمل یا تردید کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

      یہ پہلی بار نہیں ہے کہ راہول گاندھی نے دڑو چٹائی (ڈرو مت) کو اپنی ٹیگ لائن بنائی ہے کیونکہ وہ خود کو ایسے شخص کے طور پر پیش کرنا چاہتے ہیں جو حکومت پر بار بار تنقید کرتا ہو۔ وہ آر ایس ایس کی طرف سے ہتک عزت کے نوٹس پر سمن میں شرکت کر رہے ہیں، یہ کہتے ہوئے کہ وہ معافی نہیں مانگیں گے۔

      انہوں نے ایک بار تو یہ بھی اعلان کیا تھا کہ وہ راہول گاندھی ہیں اور راہل ساورکر نہیں، جو کہ ہندو قوم پرستی کی ایک اہم شخصیت کا حوالہ دیتے ہوئے بی جے پی پر کھلی تنقید ہے جس نے تحریک آزادی کے دوران انگریزوں سے معافی مانگی تھی۔

      مزید پڑھیں: J&K News: جموں وکشمیر میں انکاونٹر کے تین واقعات میں لشکر کے پانچ دہشت گرد ڈھیر، اب تک وادی میں مارے گئے 100 دہشت گرد

      طاقت کا مظاہرہ تقریباً 2015 میں گاندھی خاندان کی طرح ہے جب راہل اور سونیا دونوں نے اسی معاملے میں ضمانت کی درخواست کی تھی۔ لیکن کانگریس کے اندر بہت سے لوگ سوچ رہے ہیں کہ کیوں راہول گاندھی اسے طاقت کا مظاہرہ بنائیں اور خاموشی سے ای ڈی کے دفتر نہ جائیں۔

      یہ بھی پڑھئے: وادی کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگز کے خلاف آواز بلند کریں عوام : ایل جی منوج سنہا

      ڈی کے شیوکمار اور پی چدمبرم جیسے کئی کانگریسی لیڈر احتجاج میں شرکت کرنے والے ہیں، خود ای ڈی کے سمن اور تحقیقات کا سامنا کر رہے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: